پنجاب ہاوس میں نواز شریف نے لطیفہ سنانے کے بعد ایسا شعر سنا دیا کہ لیگی رہنماﺅں نے خوب داد دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک )سابق وزیر اعظم نواز شریف کی پاناما کیس میں نا اہلی کے بعد دارالحکومت اسلام آباد میں پنجاب ہاوس کی سیاست نے کافی شہرت حاصل کر لی ہے ،نا اہلی کے بعد نواز شریف وزیراعظم ہاوس سے نکل کر سیدھا پنجاب ہاوس پہنچے تھے جہاں سے مشن جی ٹی روڈ شروع ہوا تھا ،اس کے بعد سے اب تک نواز شریف نے اسلام آباد میں واقع پنجاب ہاوس میں ڈیرے جمع رکھے ہیں جہاں دیگی لیگی رہنما اور کارکنان بھی موجود ہوتے ہیں ۔پنجاب ہاوس میں نواز شریف لیگی رہنماﺅں کے ساتھ غیر رسمی مشاورتی اجلاس بھی کرتے ہیں جن میں اکثر اوقات نواز شریف لطیفوں اور شعر و شاعری کے جوہر بھی دکھاتے ہیں ۔ایسے ہی ایک میٹنگ کی ویڈیو سوشل میڈ یا پر وائرل ہو گئی جس میں نواز شریف نے شعر سنا یا تو لیگی رہنماﺅں نے انہیں خوب داد دی ۔
پنجاب ہاوس میں ایک غیر رسمی اجلاس کے دوران نواز شریف نے رہنماﺅں کو شعر سناتے ہوئے کہا
دل بغض و حسد میں رنجو رنہ کر،یہ نور خدا ہے اسے بے نور نہ کر
نا اہل و کمینہ کی خوشامد سے اگر جنت بھی ملے تجھ کو قبول نہ کر
یہ شعر سنتے ہی لیگی رہنماﺅں نے نواز شریف کی تعرفوں کے پل باندھ دیئے اور انہیں خوب داد دی گئی ۔واضح رہے کہ کچھ دن قبل نواز شریف نے ایک میٹنگ کے دوران لطیفہ سنا یا تھا جس پر لیگی رہنما کھل کھلا کر ہنسے تھے

اپنا تبصرہ بھیجیں