10 ماہ بعد مہنگائی کی شرح میں نمایاں کمی، مہنگائی کی شرح 8.5 فیصد پر آگئی

اسلام آباد: (سٹی نیوز) 10 ماہ بعد مہنگائی کی شرح میں نمایاں کمی ہوئی ہے۔ اپریل میں مہنگائی کم ہوکر 8.5 فیصد ہوگئی جبکہ رواں مالی سال کے پہلے 10 ماہ کے دروان مہنگائی کی شرح 11.2 فیصد رہی۔

تفصیلات کے مطابق مارچ کے مقابلے میں اپریل میں مہنگائی میں اعشاریہ 8 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔ مارچ میں مہنگائی کی شرح دس اعشاریہ دو فیصد تھی جو اپریل میں کم ہوکر 8.5 فیصد پر آگئی۔ جولائی تا اپریل کے دوران مہنگائی کی شرح 11.2 فیصد رہی۔

ادارہ شماریات کےمطابق مارچ کے مقابلے میں گزشتہ ایک ماہ میں شہری علاقوں میں پیاز کی قیمتوں میں 23فیصد، چکن 22، ٹماٹر11، تازہ دودھ 4.29، سبزیاں 4 فیصد اور گندم کی قیمتوں میں 3.29 فیصد کمی ہوئی۔

ایک سال میں شہری علاقوں میں ٹماٹر 55 اورچکن29 فیصد سستا ہوا، بجلی قیمتوں میں 6 فیصد کمی ہوئی۔ جبکہ تازہ پھل18فیصد، انڈے 15فیصد، دال مسور 28فیصد، دال مونگ23فیصد، دال ماش14، دال چنا11، بیسن 8 اور چینی 2.55فیصد مہنگی ہوئی۔

ادارہ شماریات کے مطابق اپریل 2019ء سے اپریل 2020ء کے دوران شہری علاقوں میں دال مونگ 101 فیصد، آلو92، دال ماش 68، دال مسور47، انڈے44، پیاز41، دال چنا31، بیسن29اور چینی 27فیصد مہنگی ہوئی۔ اس دوران گھی کی قیمتوں میں 26فیصد، کوکنگ آئل22، گندم17، آٹا15، گوشت14فیصد اور ادویات کی قیمتوں میں 13فیصد اضافہ ہوا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں