کیا آپ کو معلوم ہے اکثر جوتوں میں یہ اضافی سوراخ کیوں ہوتا ہے؟ اس کا انتہائی اہم فائدہ جانئے

برمنگھم(نیوز ڈیسک)نئے جوگرز خریدنے والوں کو اکثر ایک حیرانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اور وہ یہ کہ سب سوراخوں میں سے تسمے گزار لینے کے بعد بھی اوپری حصے میں دو سوراخ کیوں بچ رہتے ہیں؟ اگر ان میں سے تسمہ نہیں گزارنا تو پھر ان کی موجودگی کا مقصد کیا ہے؟
اس دلچسپ سوال کا جواب جاننے کے لئے جریدے بزنس انسائیڈر نے ایک چھوٹی سی تحقیق کی اور بالآخر اصل بات کا پتا چل ہی گیا۔ تو جناب بات کچھ یوں ہے کہ یہ سوراخ ہرگز بے مقصد نہیں ہیں۔ یہ خاص طور پر دوڑ لگانے والے کھلاڑیوں کے کام آتے ہیں جو ان سوراخوں میں سے بھی تسمہ گزار کر اسے کس کر باندھ لیتے ہیں۔ اس کا فائدہ یہ ہوتا ہے کہ تیز دوڑنے کے دوران جوتے کے اندر ایڑی اپنی جگہ پر مضبوطی سے قائم رہتی ہے اور اس کے آگے پھسلنے کا خدشہ نہیں ہوتا۔ یہی فائدہ عام لوگوں کے لئے بھی دستیاب ہے۔ عام حالات میں بھی چلتے ہوئے ایڑی آگے پیچھے حرکت نہیں کرتی، اور یوں اس پر رگڑ لگنے اور چھالے بننے کا خدشہ کم ہو جاتا ہے۔
ان سوراخوں میں سے تسمہ گزارنے کا مخصوص طریقہ ہے۔ پہلے ایک تسمے کو دونوں جانب کے سورخوں میں سے گزار کر دونوں جانب چھلے بنائے جاتے ہیں اور پھر ان چھلوں میں سے پہلے سے بندھے تسمے کے سروں کو گزار کر آپس میں کس کر گرہ لگائی جاتی ہے۔ ورزش اور دوڑ کے امور سے واقفیت رکھنے والے کہتے ہیں کہ جوگرز کے اضافی سوراخوں میں تسمہ ضرور ڈالنا چاہئیے کیونکہ اس کے باعث پاؤں کو تحفظ بھی ملتا ہے اور آرام بھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں