جو ایک مرتبہ پاکستان کی نمائندگی کر لیتا ہے وہ کسی اور ملک کیلئے کھیلنے کا سوچ بھی نہیں سکتا

لندن (سٹی نیوز) کسی بھی کرکٹر کیلئے اپنے ملک کی نمائندگی کرنا سب سے بڑا خواب ہوتا ہے اور لیکن جب یہ ملک پاکستان ہو تو پھر جذبہ کچھ الگ ہی ہوتا ہے اور جو ایک مرتبہ پاکستان کی نمائندگی کر لیتا ہے وہ کسی اور ملک کیلئے کھیلنے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔
ایسی ہی کچھ سوچ کا اظہار محمد عامر اور عماد وسیم نے بھی کیا جن سے یہ سوال پوچھا گیا تھا کہ اگر انہیں پاکستان کے علاوہ کسی اور ملک کیلئے کھیلنے کا موقع ملے تو وہ کس ملک کیلئے کھیلیں گے۔ تقریب میں شریک عماد وسیم نے کہا کہ وہ کسی اور ملک کی نمائندگی کرنے کے بارے میں سوچ بھی نہیں سکتے جس پر سوال کرنے والے نے کہا کہ اگر آپ کو پاؤنڈز دئیے جائیں تو؟ عماد وسیم کا کہنا تھا کہ اگر 10 ہزار پاؤنڈز بھی ملیں تو بھی نہیں کھیلیں۔
پاکستان کے مایہ ناز باؤلر محمد عامر سے بھی جب یہ سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ ان کا جینا اور مرنا پاکستان کیلئے ہے اور وہ کسی کے علاوہ کسی اور ملک کیلئے کھیلنے کا سوچ بھی نہیں سکتے۔ ان کے اس جواب پر حاضرین نے والہانہ داد دیتے ہوئے ان کی خوب پذیرائی کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں