توہین عدالت کیس، احسن اقبال نے عدالت نے غیر مشروط معافی مانگ لی

لاہور(ویب ڈیسک)سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے توہین عدالت میں عدالت سے غیر مشروط معافی مانگ لی اور تحریری معافی نامہ عدالت میں جمع کرادیا،عدالت نے سماعت 5 ستمبر تک ملتوی کردی۔
سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کیخلاف توہین عدالت کیس کی ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی، احسن اقبال اپنے وکیل کے ہمراہ عدالت میں پیش ہوئے،وکیل احسن اقبال نے کہا کہ احسن اقبال کی جانب سے تفصیلی جواب جمع کرادیا،جواب میں غیرمشروط معافی مانگ لی ہے،جسٹس عامر محمود نے استفسار کیا کہ کیا آپ نے اپنا قصور تسلیم کر لیا ہے، وکیل احسن اقبال نے کہا کہ ہم نے غیر مشروط معافی مانگ لی ہے
جسٹس عامر محمود نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ احسن اقبال بار بار کہتے ہیں کہ ایک جماعت کو ٹارگٹ کیاجا رہا ہے ،عدلیہ کا کیاکام کہ ایک جماعت کو ٹارگٹ کرے ۔
جسٹس عاطر محمود نے کہا کہ یہاں آپ معافی مانگتے ہیں،اورکہتے ہیں آئندہ ایسانہیں ہوگا،باہرجاتے ہی پھروہی باتیں کرتے ہیں،آپ باہر اسکے جیالے بن جاتے ہیں جو عدلیہ کے پیچھے ہاتھ دھوکرا پڑا ہے ،احسن اقبال کو عزت دیتے ہیں باہر جاکر ایسے بیانات قابل برداشت نہیں۔
عدالت نے احسن اقبال سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ سیاسی ورکرکادل عام لوگوں سے بڑاہوتاہے،پیپلزپارٹی پرجتنا ظلم ہوا،آفرین ہے وہ کچھ نہیں بولے۔
عدالت نے کہا کہ گزشتہ سماعت پرشاہدخاقان عباسی پیش ہوئے ،جومیرٹ پرتھاان کودیا،آپ عدالتوں کے بارے میں ایسے ہی کمنٹس کریں گے توکیاہوگا؟آپ نے جوتقریرکی کیاوہ درست موقع تھا؟،آپ کی لیڈرشپ جوکررہی ہے وہ کیاہے،100پیشیاں بھگت لیں توکیاہوا،جسٹس عامر محمود نے کہا کہ فیصلے آپ کے حق میں آئیں توعدلیہ ٹھیک ورنہ بری۔
وکیل احسن اقبال نے استدعا کی کہ غیرمشروط معافی مانگ لی،کارروائی ختم کی جائے،عدالت نے کہا کہ مقدمے کی سماعت گرمیوں کی چھٹیوں کے بعد تک ملتوی کردیتے ہیں ،اس دوران احسن اقبال کے رویے کو نوٹ کیا جائے گااگر ان کا رویہ ٹھیک رہا تو کیس نمٹا دیں گے عدالت نے سماعت 5 ستمبر تک ملتوی کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں