پاکستان بمقابلہ آسٹریلیا ٹی ٹوئنٹی، شاہین مشکلات کا شکار، 61 رنز پر 6 کھلاڑی پویلین لوٹ گئے، لائیو اپ ڈیٹ

ہرارے (ویب ڈیسک) زمبابوے کے خلاف 74 رنز کی فتح حاصل کرنے والی گرین شرٹس کی تگڑی ٹیم سامنے آتے ہی تھر تھر ٹانگیں کانپنے لگیں۔ پاکستان اور آسٹریلیا کے مابین ٹرائینگولر سیریز کے ٹی ٹوئنٹی میچ میں پاکستان کے 6کھلاڑی صرف 61 رنز بنا کر پویلین لوٹ چکے ہیں۔
آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا جو شاہینوں کیلئے انتہائی بھاری ثابت ہوا ۔سٹین لیک نے گرین شرٹس کی بیٹنگ لائن کو تہس نہس کرکے رکھ دیا اور صرف 24 رنز پر 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھادی۔ اسٹین لیک کے پہلے ہی اوور کی تیسری گیند پر محمد حفیظ بغیر کوئی رنز بنائے ایرون فنچ کو کیچ دے کر پویلین لوٹ گئے۔دوسری وکٹ پر حسین طلعت اور فخر زمان نے 12 رنز کی شراکت قائم کی تو حسین طلعت بھی اسٹین لیک کا شکار بن گئے جس کے بعد فخر زمان بھی اسٹین لیک کی گیند پرکیچ آو¿ٹ ہوئے، وہ 6 رنز ہی بناسکے۔ سٹین لیک کا چوتھا شکار کپتان سرفراز احمد بنے جنہوں نے 4 رنز بنا کر فنچ کے ہاتھوں وکٹ گنوادی۔ سٹین لیک کے شاندار 4 اوورز 4 وکٹوں کے ساتھ اختتام پذیر ہوئے تو شعیب ملک 13 کے سکور پر رن آؤٹ ہوگئے۔آصف علی نے لڑکھڑاتی ٹیم کو سہارا دینے کی کوشش بھی کی لیکن وہ اس میں کامیاب نہ ہوسکے اور 22 رنز پر مارکس سٹوئنس کی گیند پر کلین بولڈ ہوگئے۔
اس سے قبل پاکستان، زمبابوے اور آسٹریلیا کے مابین کھیلی جارہی سہ ملکی ٹی 20 سیریز کے دوسرے میچ میں آسٹریلیا نے ٹاس جیت کرپاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی ۔ خیال رہے کہ اتوار کے روز پاکستان اور زمبابوے کے میچ میں شاہینوں نے زبردست پرفارمنس دکھائی اور یہ میچ 74 رنز سے جیت لیا تھا۔ پہلے میچ میں بھی پاکستان ٹاس ہار گیا تھا لیکن اس نے پہلے بیٹنگ کی تھی اور موجودہ میچ میں بھی صورتحال ویسی ہی ہے۔ کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ زمبابوے کے خلاف ٹیم نے بیٹنگ اچھی کی تھی، پچھلے میچ کی طرح اچھا پرفارم کرنے کی کوشش کریں گے۔
واضح رہے کہ آخری مرتبہ دونوں ٹیمیں 2016 میں کھیلے جانے والے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں مدمقابل آئیں تھی جس میں آسٹریلیا نے گرین شرٹس کو 21 رنز سے شکست دی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں