لیاقت پور : سوئی گیس کی غیر اعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ کا بحران شدت اختیار کر گیا صبح کے وقت گیس کی بندش سےسکول جانے والے بچے اور سرکاری ملازمین ناشتہ کیے بغیر دفتر جانے پر مجبور حکام بالا سے نوٹس لینے کا مطالبہ

ترنڈہ محمدپناہ شہر میں سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ عروج پر گیس پریشر نہ ہونے کے برابر جسکے باعث گھریلو صارفین کو بھی گیس کے کم پریشر کی وجہ سے کھانا پکانے میں دشواری کا سامنا ہے ۔صبح کے وقت سکول جانے والے بچوں کو ناشتہ نہیں ملتا تو دوسری جانب سرکاری ملازمین بھی ناشتہ کیے بغیر اپنے دفاتر جانے پر مجبور شہریوں کا کہنا ہے کہ گیس کے بحران نے معمولات زندگی کو شدید متاثر کر دیا ہے
گیس کی لوڈشیڈنگ کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ٹال ملکان نے جلانے والی لکڑی کی قیمتوں میں کئی گنا اضافہ کر دیا ہے۔جسکی وجہ سے گھریلو صارفین اپنا چولہا جلانے کے لیے مہنگے داموں لکڑی خریدنے پر مجبور ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں