کمپیوٹر پر لوگ جس طرح کی فحش فلمیں تلاش کرتے اور دیکھتے ہیں

نیویارک(ویب ڈیسک) بہت سے لوگ انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھنے کی لت میں مبتلا ہوتے ہیں لیکن ان کے لیے بری خبر ہے کہ ان کے کمپیوٹر، جن پر وہ فحش فلمیں دیکھتے ہیں،کے ذریعے ان کی جنسی رغبت کے متعلق معلومات حاصل کی جا سکتی ہیں کہ آیا وہ ہم جنس پرست ہیں یا جنس مخالف میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ ہارورڈ یونیورسٹی کے ایک سائنسدان نے انہی معلومات کی بنیاد پر جنسی مواد کے متعلق خواتین کی ترجیحات کے بارے میں کچھ ناقابل یقین انکشافات کر دئیے ہیں۔
تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ سیتھ سٹیفنز کا کہنا ہے کہ ’’کمپیوٹر پر لوگ جس طرح کی فحش فلمیں تلاش کرتے اور دیکھتے ہیں، کمپیوٹر اس سے لوگوں کی ذہنیت پڑھ لیتا ہے اور اپنے اندر محفوظ کر لیتا ہے۔ اس ڈیٹا سے معلوم کیا جا سکتا ہے کہ صارف کی جنسی رغبت کیا ہے۔ ہماری تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ زیادہ تر خواتین ہم جنس پرست خواتین کی فحش ویڈیوز دیکھتی ہیں۔ اس کے علاوہ جن فحش فلموں میں اداکاراوں پر تشدد کیا جائے وہ بھی خواتین صارفین میں بہت زیادہ مقبول ہیں۔‘‘

اپنا تبصرہ بھیجیں