طالبہ نے اپنی کلاس فیلوز کو متاثر کرنے کے لیے کھانے کی ایک ایسی چیز ایجاد کر ڈالی کہ اب اسی چیز نے اسے کروڑ پتی بنا دیا

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں طالبہ نے اپنی کلاس فیلوز کو متاثر کرنے کے لیے کھانے کی ایک ایسی چیز ایجاد کر ڈالی کہ اب اسی چیز نے اسے کروڑ پتی بنا دیا ہے۔میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق برطانوی علاقے واروک شائر کی رہائشی 24سالہ ہولی بروک نے اپنی کلاس فیلوز کو متاثر کرنے کے لیے ’لالی پاپ‘ بنائے۔ ان لالی پاپس کی خصوصیت یہ تھی کہ ان میں الکوحل بھی شامل کی گئی تھی۔

رپورٹ کے مطابق ہولی کے بنائے گئے یہ لالی پاپ اس قدر مشہور ہوئے کہ پہلے ہی سال میں 1لاکھ 20ہزار کی تعداد میں فروخت ہوئے جس سے ہولی 3لاکھ پاؤنڈ (تقریباً 3کروڑ 90لاکھ روپے) آمدنی ہوئی۔ہولی اب ان لالی پاپس کی ایک کمپنی قائم کر چکی ہے اور اسے باقاعدہ کاروبار بنا چکی ہے۔ 2013ءمیں یونیورسٹی آف بیتھ کی سہیلیوں کو متاثر کرنے کے لیے شروع کیے گئے کام سے وہ اب سالانہ کروڑوں روپے کما رہی ہے۔ اس نے لالی پاپ بنانے کے لیے 21کاریگر رکھے ہوئے ہیں جو کئی ذائقوں میں لالی پاپ بنارہے ہیں۔

ہولی کا کہنا تھا کہ ”ابتداءمیں میں نے اپنی سہیلیوں کو یہ لالی پاپ بنا کر کھلائے جو انہیں بہت پسند آئے اور وہ بار بار ان کا تقاضا کرنے لگیں۔ وہیں سے مجھے اس کاروبار کا خیال آیا۔ اب عام دنوں میں روزانہ 10ہزار سے زائد لالی پاپ فروخت ہو رہے ہیں جبکہ کرسمس کے موقع پر یہ تعداد 40ہزار سے اوپر چلی جاتی ہے۔ شروع میں میں اکیلی یہ لالی پاپ بناتی تھی۔ مجھے دن میں 18گھنٹے کام کرنا پڑتا تھا لیکن اب میں نے سٹاف رکھ لیا ہے۔“

اپنا تبصرہ بھیجیں