ملتان اور کوئٹہ کے یوٹیلٹی اسٹورز پر چینی اور آٹے کی قلت، شہری پریشانی سے دوچار

کوئٹہ: (سٹی نیوز) بازاروں میں چینی اور آٹا مہنگا ہونے کے بعد کوئٹہ اور ملتان کے یوٹیلٹی اسٹورز پر دونوں چیزیں نایپد ہو گئیں، سفید پوش شہری اور تنخواہ دار طقبہ یوٹیلٹی سٹورپر سستی چیزیں نہ ملنے کے باعث پریشانی سے دوچار ہیں۔

پٹرولیم مصنوعات میں اضافے کے بعد مہنگائی کی نئی لہر، کوئٹہ میں گذشتہ ایک ہفتے کے دوران تھوک و پرچون میں چینی 3 روپے فی کلو مہنگی ہو گئی۔ شہریوں کو اکثر یوٹیلٹی سٹورز پر 800 روپے میں ملنے والا 20 کلو آٹے کا تھیلہ بھی میسر نہیں، لوگ سستے آٹے کے حصول کے لئے ہر روز ایک سے دوسرے یوٹیلٹی سٹور کے چکر لگانے پر مبجورہیں۔ یوٹیلٹی اسٹورز انچارج کا موقف ہے کہ جب سپلائی آتی ہے تو چینی اور آٹا صارفین کو فراہم کر دیا جاتا ہے۔

دوسری جانب ملتان ریجن کے 400 سے زائد یوٹیلٹی اسٹورز پر گزشتہ کئی روز سے چینی غائب ہے جبکہ 800 روپے میں ملنے والا درجہ دوئم کا 20 کلو کے آٹے کا تھیلہ بھی نایاب ہو گیا ہے تاہم شہر کے اکثر سٹورز پر دالیں اور مصالحہ جات کی بھی قلت ہے جس کی وجہ سے شہری پورا دن سستی اشیاء کی تلاش میں خوار ہوتے ہیں لیکن انتظامیہ کو اس کی ذرا بھی پرواہ نہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں