تحریک انصاف کی منحرف رہنما عائشہ گلا لئی کی جانب سے عمران خان کے کردار پر سنگین الزامات کے بعد عائشہ احد ایک بار پھر میدان میں آگئی

اسلام آباد (سٹی نیوز)تحریک انصاف کی منحرف رہنما عائشہ گلا لئی کی جانب سے عمران خان کے کردار پر سنگین الزامات کے بعد عائشہ احد ایک بار پھر میدان میں آگئی ہیں،چند دن قبل تحریک انصاف کی خواتین رہنماؤں راشدہ یاسمین اور فردوس عاشق اعوان نے عائشہ احد کو ساتھ بٹھا کر پریس کانفرنس کی جس میں ایک بار پھر عائشہ احد نے حمزہ شہباز کی اہلیہ ہونے کا دعویٰ کیا اور اس طرح عائشہ گلا لئی کے ساتھ ساتھ یہ سلسلہ بھی چل نکلا،اب عائشہ گلالئی کی حمایت میں میدان میں آنے والے لیگی رہنماوں سے عائشہ احد کے حوالے سے بھی سوالات کیے جا رہے ہیں۔لیکن کیا آپ کو یاد ہے کہ چھ سال قبل جب عائشہ احد نے قرآن پاک اٹھا کر حمزہ شہباز شریف کی اہلیہ ہونے کا دعویٰ کیا تھا تو اس کے بعد حامد میر کے پروگرام میں حمزہ شہباز شریف نے کیا جواب دیا تھا؟
چھ سال قبل عائشہ احد نے قرآن پاک اٹھا کر کہا تھا کہ یہ کتاب میرے لیے بہت اہمیت رکھتی ہے۔اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ میں حمزہ شہباز شریف کی بیوی تھی اور ہوں۔ہمارا نکاح ہوا تھا جس میں گواہان بھی موجود تھے،میں نے حق مہر میں ان سے عمرہ اور اپنی بچی کا تحفظ مانگا تھا۔اس پر جواب دیتے ہوئے حمزہ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ میں پوری ذمہ داری سے کہتا ہوں،یہ ایک غلیظ پراپیگنڈہ ہے۔انہوں نے کہا تھاکہ یہ کیس عدالت میں بھی چلا،اس خاتون سے میرا کوئی تعلق نہیں ہے۔ان کا کہنا تھا کہ میرے بزرگوں نے مجھے سکھا یا ہے کہ عزت کی دال روٹی اس مرغن غذا سے بہتر ہے جس پر لوگ انگلی اٹھائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں