محمد شامی کے ساتھ وہ ہی ہوا جس کا ڈر تھا ،بیوی کی جانب سے شرمناک ترین الزامات لگائے جانے کے بعد بھارتی کرکٹرکو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا

ممبئی(ویب ڈیسک)بھارتی کرکٹ بورڈ نے فاسٹ بولر محمد شامی کو اہلیہ کی جانب سے لگائے گئے الزامات پر سینٹرل کنٹریکٹ سے ہی باہر کردیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق بی سی سی آئی نے 2018 کے لیے 34 کھلاڑیوں کو سینٹرل کنٹریکٹ دے دیا ہے، جس میں جسپریت بھمرا اور بھونیشور کمار جیسے کھلاڑیوں کی ترقی ہوئی ہے ، ٹیسٹ فارمیٹ میں بولنگ سکواڈ کی ریڑھ کی ہڈی سمجھے جانے والے فاسٹ بولر محمد شامی کو باہر کردیا گیا ہے۔
بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ بی سی سی آئی کی فہرست میں محمد شامی کا نام شامل تھا تاہم ان کا نام آخری وقت میں نکالا گیا اور اس کی وجہ ان کی اہلیہ کی جانب سے لگائے گئے الزامات ہیں، بی سی سی آئی کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق شامی کی اہلیہ کے ان پر الزامات کی وجہ سے انہیں سینٹرل کنٹریکٹ میں شامل نہیں کیا، فاسٹ باولرکو کنٹریکٹ دینے کے بارے فیصلہ پولیس تحقیقات مکمل ہونے کے بعد ہی کیا جائے گا۔واضح رہے کہ شامی کی اہلیہ حسین جہاں نے سوشل میڈیا پر سنگین الزامات عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ محمد شامی کے کئی خواتین سے تعلقات ہیں، وہ اور ان کے گھر والے نے ناصرف مجھے جسمانی تشدد کا نشانہ بناتے رہے ہیں بلکہ جان سے مارنے کی کوشش بھی کرچکے ہیں جب کہ محمد شامی ان تمام الزامات کو بے بنیاد قرار دے چکے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں