جاپانی شہر ناگاساکی پر ایٹمی حملے کو 75 سال مکمل، مرکزی تقریب میں وزیراعظم کی شرکت

ٹوکیو: (سٹی نیوز) جاپان کے شہر ناگا ساکی پر ایٹمی حملے کو 75 سال گزر گئے، مرکزی تقریب میں وزیراعظم شنزو ایبے سمیت دیگر شخصیات نے شرکت کی۔

ناگا ساکی پر ایٹمی حملے کی یاد میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی، وزیراعظم شنزو ایبے نے یادگار پر پھول چڑھائے، اسکول کے بچوں نے قومی نغمے بھی پیش کئے، اس موقع پر شرکا نے عالمی برداری سے ایٹمی ہتھیاروں پر پابندی کا مطالبہ کیا۔

واضح رہے 9 اگست 1945 میں امریکہ نے ناگاساکی پر ایٹم بم گرایا تھا، اس جوہری حملے میں 74 ہزار افراد ہلاک ہوئے تھے جبکہ لا تعداد افراد صدمے کا شکار ہوئے تھے۔

اس سے 3 روز قبل جاپان ہی کے شہر ہیروشیما پر امریکہ نے لٹل بوائے نامی پر ایٹم بم سے حملہ کیا تھا جس میں ایک لاکھ 40 ہزار افراد لقمہ اجل بنے تھے۔ بم پھٹنے سے 600 میٹر کا علاقہ دیکھتے ہی دیکھتے کھنڈرات میں تبدیل ہو گیا تھا، لا تعداد لوگ شدید زخمی ہوئے تھے جبکہ متعدد افراد کینسر سمیت دیگر بیماریوں میں مبتلا ہو گئے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں