سپریم کورٹ کے فیصلے سے پہلے ہی کچھ لوگوں نے رونا دھونا شروع کر دیا

اسلام آباد (سٹی نیوز) جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ قطری شہزادے کو بلانا عدالت کا اختیار ہے۔ اگر اسے یہ بتایا جاتا کہ یہاں تیتر ہیں اور بٹیر بھی ہیں تو وہ آ جاتا، ساری دنیا ترقی کی طرف گامزن ہے اور پاکستان کرپشن کی دلدل میں پھنس گیا ہے ، ہم چاہتے ہیں کہ فیصلہ سپریم کورٹ ہی کرے۔
میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے سے پہلے ہی کچھ لوگوں نے رونا دھونا شروع کر دیا ہے، یہ تو ابتداء ہے آگے آگے دیکھئے ہوتا ہے کیا۔ عدالتوں کو دھمکیاں دینے والے شکست خوردہ لوگ ہیں اور جن لوگوں کی آوازیں بلند ہو رہی ہیں وہ حق پر نہیں ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ جن کے پاس اختیارات تھے انہی لوگوں نے کرپشن کی ہے جبکہ ایوانوں نے بھی اپنے کردار ادا نہیں کئے۔ ہم سب کو سپریم کورٹ کے فیصلے کا انتظار ہے اور اسے طول دینے کے بجائے فیصلہ ہو جانا چاہئے۔ سراج الحق نے کہا کہ ہم بادشاہت کے بجائے آئین و قانون کی حکمرانی چاہتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں