پلوامہ حملے نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کو حواس باختہ کر دیا ،پاکستان کو کھلی دھمکی دے دی

نئی دہلی(نیوز ڈیسک)ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی نے مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں سیکیورٹی فورسز پر گذشتہ روز ہونے والے حملے کے بعد ایک مرتبہ پھر پاکستان کے خلاف روایتی الزام تراشی اور گیدڑ بھبکی کا سہارا لیتے ہوئے دھمکی آمیز لہجہ اختیار کیا ہے اور کہا ہے کہ ہمارا پڑوسی ملک یہ بھول رہا ہے کہ یہ نئی طرح اورنئی پالیسی والا ہندوستان ہے، دہشت گرد تنظیموں اوران کے آقاوں نے جوحیوانیت دکھائی ہے، اس کا پورا حساب لیاجائے گا اور حملہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کریں گے۔

بھارتی نجی ٹی وی کے مطابق جھانسی میں ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ہندوستانی وزیر اعظم نریندرا مودی نے پاکستان کا نام لئے بغیر ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہمارا پڑوسی ملک خود اقتصادی بدحالی سے گزررہا ہے، اگرہمارے پڑوسی کو لگ رہا ہے کہ وہ ہندوستان کو غیرمستحکم کردے گا، تووہ بڑی غلطی کررہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پلوامہ میں حملہ کر کے دہشت گردوں نے بہت بڑی غلطی کردی ہے، اب انہیں اس کی بہت بڑی قیمت چکانی پڑے گی،آج ملک بہت ہی پرجوش اورمایوس ہے،آپ سبھی کے جذبات کومیں بخوبی سمجھ پارہا ہوں، ہمارے جوانوں نے ملک کے تحفظ کیلئے اپنی جان کی قربانی پیش کی ہے، ان کی یہ قربانی رائیگاں نہیں جائے گی۔بھارت وزیر اعظم نے دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ سیکیورٹی فورسز کو مکمل آزادی دے دی گئی ہے،سیکیورٹی اہلکاروں کو آگے کی کارروائی کے لئے، وقت کیا ہو، مقام کیا اورخاکہ کیسا ہو؟یہ طے کرنے کے لئے انہیں پوری آزادی دے دی گئی ہے،میں سلامتی دستوں پر پورا بھروسہ ہے،دہشت گرد تنظیموں اوران کے آقاوں نے جوحیوانیت دکھائی ہے، اس کا پورا حساب لیاجائے گا۔نریندرمودی نے کہا کہ ہمارے پڑوسی ملک کے لئے روزمرہ کا خرچ تک چلانا مشکل ہوگیا ہے، وہ دنیا میں کٹورا لے کرگھوم رہا ہے، پلوامہ جیسی تباہی مچاکروہ ہمیں بھی بدحال کرنا چاہتا ہے لیکن اس کے اس منصوبے کا ہم سب مل کرمنہ توڑجواب دیں گے، دکھ کی اس گھڑی میں پورا ملک ایک ساتھ ہے، سیاست چھوڑکرپورا ملک متحد ہوکراس مشکل وقت کا سامنا کرے گا،120 کروڑ ہندوستانی ایسی ہر سازش اور ہر حملے کا جواب دے گا،ایسے حملوں کا ملک ڈٹ کر مقابلہ کرے گا،یہ ملک اب ر کنے والا نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں