کورونا وائرس سے متعلق پنجاب نے پیشرفت رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروا دی

اسلام آباد: (سٹی نیوز) کورونا وائرس سے متعلق پنجاب نے پیشرفت رپورٹ سپریم کورٹ آف پاکستان میں جمع کروا دی ہے۔

سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مالی سال 21-2020 میں صوبے بھر کے لئے نئی گاڑیوں کی خریداری کے لئے 46کروڑ80لاکھ سے زائد رقم مختص کی گئی ہے۔ جس میں سے 2کروڑ 90لاکھ روپے محکمہ زراعت کے لئے مختص کی گئی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے نئی گاڑیوں کی خریداری کے لئے رقم مختص نہیں کی گئی۔ صوبائی سالانہ ترقیاتی پروگرام سے ملتان میں ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے 706ملین روپے مختص کئے گئے ہیں۔ کوڈ 19 سے بچائو کے لئے ادویات کی فہرست ڈریپ کی گائیڈ لائینز کے مطابق مرتب کی ہے۔

صوبائی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ڈیٹول سمیت اہم ادویات کی مارکیٹ میں فراہمی کی ہدایات جاری کی جا چکی ہیں۔ صوبے میں ادویات کی کمی نہیں، ادیات کی کمی کی خبریں بے بنیاد ہیں۔ اگر ادویات کی کمی کا سامنا ہوا تو اس ممکنہ صورتحال سے نمٹنے کے لئے میکنزم تیار ہے۔

رپورٹ کے مطابق کوڈ 19 کے پھیلاؤ کو سامنے رکھتے ہوئے صوبے میں نامزد فارمیسی کی تعداد میں اضافہ کیا گیا ہے۔ موجودہ صورتحال میں 21 اضلاع میں نامزد فارمیسی سروس فراہم کررہی ہیں۔ صوبے میں آکسیجن اور دیگر ادویات کی زخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق صوبے میں کام کرنے والے سینیٹری ورکرز کو 30جون تک تنخواہیں ادا کردی گئی ہیں۔ مون سون موسم کے لئے پی ڈی ایم اے نے حفاظتی اقدامات کئے ہیں۔ فلڈ کنٹرول روم کے قیام سمیت سیلابی بندوں کا معائنہ حفاظتی اقدامات میں شامل ہے۔

فیصل آباد کے علاقے رضا آباد سے متعلق تفصیلات رپورٹ کا بھی حصہ ہے، رضا آباد کا علائقہ تین مرکزی بازاروں اور 25 گلیوں پر مشتمل ہے۔ اس علاقے میں ڈرینج کا نظام پراناہے۔ علاقے کے ڈرینج سسٹم کو بہتر کرنے کے لئے مارچ 2020ء میں کام شروع کیا جو کورونا کی وجہ سے رک گیا۔

رپورٹ کے مطابق دوبارہ کام 21 جون سے شروع کردیا گیا ہے جو جلد مکمل ہو جائیگا۔ واسا لاہور، فیصل آباد، ملتان، راولپنڈی، گوجرانوالہ کے شہری علاقوں میں واٹر سپلائی، سیوریج سسٹم کی بہتری کے لئے پلان تیار کرلیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں