حکومت نے ایوانوں کی موجودگی میں نیب کے پر کاٹنے کی کوشش کی: سراج الحق

لاہور: (سٹی نیوز) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ احتساب کا نظام پندرہ ماہ سے مذاق بن کر رہ گیا، آنے والے دن معاشی لحاظ سے مزید سخت ہونگے، ملک میں مصنوعی مہنگائی اور مصنوعی حکومت ہے۔

سراج الحق کی جانب سے جاری بیان میں انہوں نے کہا کہ اپوزیشن بار بار کہتی ہے کہ ہمیں آرڈیننس نہیں چاہیے، سینیٹ اور قومی اسمبلی میں فیصلے ہوں۔ حکومت نے احتساب اور تبدیلی کا نعرہ لگایا مگر آج احتساب مذاق بن گیا ہے۔ حکومت نے ایوانوں کی موجودگی میں نیب کے پر کاٹنے اور دانت نکانے کی کوشش کی۔

ان کا کہنا تھا کہ 15 ماہ حکومت کی سمت جانچنے کیلئے کافی ہیں کہ ان کی ڈائریکشن کیا ہے۔ مسئلہ کشمیر پر ساتھ دینے والے ممالک کا اعتماد بھی حکومت نے ختم کر دیا گیا۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ حکومت نے مہنگائی کا نیا ریکارڈ قائم کیا ہے۔ مصنوعی اکثریت اور مینڈیٹ کے باعث حکومت کمزور ہے۔ ہر ادارہ اپنا کام کرے تو پاکستان ترقی کریگا اور جمہوریت مضبوط ہوگی

ان کا کہنا تھا کہ ہمارا کوئی ذاتی ایجنڈا نہیں، ہم کسی قسم کا ابو بچاؤ پروگرام نہیں رکھتے، ہم نظام بچانا چاہتے ہیں جس کیلئے اپنی انقلابی جدوجہد جاری رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ایک طرف بھارت ہماری سرحدوں پر میزائل نصب کر رہا ہے تو دوسری طرف ہمارے تمام ادارے ایک دوسرے کیساتھ دست وگریبان ہیں اور عوام کو فتح کرنے میں مصروف ہیں۔ لوگ ووٹ دیتے ہیں، انتخابات میں نعرے لگاتے ہیں مگر ہر الیکشن کے بعد نئی مایوسی کا سامنا ہوتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں