الیکٹرونک سگریٹ صحت کیلئے نقصان دہ تو نہیں مگر اس کے اپنے خطرے ہیں، ڈاکٹروں نے خبردار کردیا، آپ بھی احتیاط کیجئے

لندن(ویب ڈیسک) جب سگریٹ نوشوں کو اپنا انجام نظر آنے لگتا ہے تو وہ اس سے جان چھڑانے کی کوشش کرتے ہیں مگر ان کے لیے یہ ایک انتہائی کٹھن مرحلہ ہوتا ہے جس میں اکثر ’ای سگریٹ‘ کا سہارا لیتے ہیں اور سمجھتے ہیں کہ اس کا کوئی نقصان نہیں ہوتا۔تاہم اب صحت کی تنظیموں نے ای سگریٹ کے متعلق بھی خطرناک انکشاف کر دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ہیلتھ واچ ڈاگ ’ایکشن آن ہیلتھ اینڈ سموکنگ‘کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ اگرچہ ای سگریٹ کا نقصان عمومی سگریٹ سے قدرے کم ہوتا ہے لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ اس کا کوئی نقصان نہیں ہوتا۔ اگر طویل عرصے تک اس کا استعمال جاری رکھا جائے تو اس کا نقصان بھی سنگین تر ہو جاتا ہے۔
ہیلتھ واچ ڈاگ کی ڈائریکٹر ہیزل چیزمین کا کہنا تھا کہ ”ڈاکٹروں کو چاہیے کہ وہ مریضوں کو اس حوالے سے آگاہی دیں۔ وہ انہیں بتائیں کہ ای سگریٹ بھی نقصانات سے خالی نہیں ہے۔ چنانچہ عام سگریٹ چھوڑ کر ای سگریٹ پر منتقل ہونے سے ان کی صحت جلد بہتر نہیں ہو گی۔ تاہم میں یہ بھی ضرور کہوں گی کہ ای سگریٹ عام سگریٹ کی نسبت کم نقصان دہ ہے۔ میں امید کرتی ہوں کہ جلد ای سگریٹ کو بطور میڈیسن لائسنس دیا جائے گا تاکہ ڈاکٹر اسے اپنے مریضوں کو تجویز کر سکیں،جس سے انہیں عام سگریٹ چھوڑنے میں آسانی ہو گی اور وہ اس کے سنگین ترین نقصانات سے بچ پائیں گے۔“

اپنا تبصرہ بھیجیں