چھوٹے تاجروں کے لیے فکسڈ ٹیکس پراجیکٹ تیاری

اسلام آباد: وزیر مملکت برائے محصولات حماد اظہر نے کہا ہے کہ نئی ٹیکس ایمنسٹی سکیم لانے کا ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا تاہم تاجروں کی طرف سے ایمنسٹی سکیم کیلئے تجاویز موصول ہوئی ہیں۔
اسلام آباد میں تاجروں کے کنونشن کے بعد میڈیا سے غیر رسمی بات چیت میں ان کا کہنا تھا کہ ٹیکس نادہندگان سے ساڑھے تیرہ ارب روپے کی ریکوری ہوئی ہے۔ یہ ریکوری نجی شعبے سے کی گئی ہے۔
اس سے پہلے اسلام آباد میں تاجر کنونشن سے وزیر مملکت محصولات حماد اظہر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد کے چھوٹے تاجروں کے لیے فکسڈ ٹیکس کا پراجیکٹ تیار ہو رہا ہے جو دو ہفتے میں مکمل ہو جائے گا۔ پراجیکٹ کامیاب ہوا تو دو ماہ میں ملک کے دیگر شہروں میں بھی چھوٹے تاجروں کے لیے فکسڈ ٹیکس سکیم لائیں گے۔
ان کا کہنا تھا کہ فکسڈ ٹیکس سے چھوٹے تاجروں کا ہراساں کرنے کا شکوہ ختم ہو جائے گا۔ سابقہ حکومت نے 19 ارب ڈالر کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ چھوڑا اور خزانہ خالی کر گئے۔ سابقہ حکومت نے 10 ارب ڈالر کے قرضے فوری ادا کرنے کے لیے چھوڑے اور اس پر ستم یہ کہ ایسا بجٹ دیا کہ ٹیکس آمدن بھی نہ چھوڑی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں