سعودی عرب میں پاکستانی شہری کا سرقلم ہونے سے بال بال بچ گیا کیونکہ

اسلام آباد (ویب ڈیسک)ایئر پورٹ سکیورٹی فورس نے کارروائی کر کے نمکو کے پیکٹس میں چھپائی گئی ڈیڑھ کلو سے زائد آئس ہیروئن برآمد کر کے سمگلنگ کی کوشش ناکام بنا دی اور یوں سعودی عرب میں سرقلم ہونے سے بال بال بچ گیا، یاد رہے کہ سعودی عرب میں منشیات سمگلنگ کی سزا سرقلم ہونا ہے اور اگر سعودی عرب پہنچ کر پکڑا جاتا تو موت کی سزا ہوسکتی تھی ۔
بدھ کو بینظیر انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر منشیات سمگلنگ کی کوشش ناکام بنا دی گئی۔ اسد زمان نامی مسافر نجی ایئرلائن سے مسقط کے راستے ریاض جارہا تھا،ملزم نے منشیات نمکو کے پیکٹس میں چھپا رکھی تھی۔
ضرور پڑھیں:”میں سری دیوی کی لاش تابوت میں ڈالنے لگا تو دیکھا کہ۔۔۔“سری دیوی کی لاش منتقل کرنے والے سماجی کارکن نے ایسی بات کہہ دی کہ ہر کوئی حیران رہ گیا
اے ایس ایف اہلکاروں نے شک پڑنے پر ملزم کے سامان کی تلاشی لی تو اس کے بیگ سے 1600 گرام آئس ہیروئن برآمد ہوئی،اے ایس ایف نے ملزم کوگرفتارکرکے اے این ایف حکام کے حوالے کردیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں