پاکستان اور سری لنکا کے درمیان قذافی سٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ کے دوران جب قومی ترانہ بجایا گیا تو ان کی آنکھوں سے آنسو جاری ہو گئے

کراچی (ویب ڈیسک) پاکستانی امپائر احسن رضا نے انکشاف کیا ہے کہ پاکستان اور سری لنکا کے درمیان قذافی سٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ کے دوران جب قومی ترانہ بجایا گیا تو ان کی آنکھوں سے آنسو جاری ہو گئے۔

احسن رضا بھی ان افراد میں شامل ہیں جو 2009ءمیں سری لنکن ٹیم کی بس پر دہشت گردوں کے حملے کے دوران زخمی ہو گئے تھے۔ انہوں نے نجی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”جب میں سٹیڈیم میں داخل ہو رہا تھا تو کوئی ڈر نہیں تھا۔ جب میں نے قذافی سٹیڈیم میں قومی ترانہ سنا تو آنکھوں سے آنسو جاری ہو گئے۔“
انہوں نے کہا کہ ”میں اسی ہوٹل میں تھہرا تھا جہاں سری لنکن ٹیم رکھا گیا تھا اور ناشتے کے دوران سری لنکن کھلاڑیوں اور حکام سے ملاقات ہوئی جس دوران سب نے سیکیورٹی اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا۔“

احسن رضا نے کہا کہ ”2009ءکے سانحہ کے دوران میں موت کے منہ سے واپس آیا۔ اس واقعے نے مجھ پر اور میری زندگی پر بہت گہرا اثر کیا ہے۔ بین الاقوامی کرکٹ اب واپس آ رہی ہے جس کا کریڈٹ پاک فوج اور پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمین نجم سیٹھی کو دینا پسند کروں گا۔“

اپنا تبصرہ بھیجیں