ہسپتال میں شہبازشریف کی تصویر کیوں لگائی؟چیف جسٹس پی کے ایل آئی کے سربراہ سعید اختر پر برہم

لاہور(ویب ڈیسک)پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ(پی کے ایل آئی) سے متعلق کیس کی سماعت کی دوران چیف جسٹس آف پاکستان پی کے ایل آئی کے سربراہ سعید اختر پر شدید برہمی کا اظہار کیا ،چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ ہسپتال میں شہبازشریف کی تصویر کیوں لگائی؟،ملک کے بانی قائداعظمؒ اور علامہ اقبالؒ ہیں،قائداوراقبال کی جگہ آپ نے انسٹیٹیوٹ میں وزیراعلیٰ کی تصویر لگا رکھی تھی،اب آپ نے وہاں پر تصاویر بدلی ہیں۔
چیف جسٹس نے کہا کہ جس نے چوغہ دیا اسکی تصویر لگا دی، احتساب کےلئے تیار ہو جائیں،ہسپتال میں اب تک کیا ہوا، اس کا فرانزک آڈٹ ہوگا۔
چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ آپ اورآپ کی بیگم کتنی تنخواہ لیتے ہیں؟،اس پر ڈاکٹر سعید اختر نے کہا کہ میری 12 لاکھ اور میری بیوی کی 8 لاکھ تنخواہ ہے ،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ ڈاکٹر صاحب سنا ہے آپ ٹی وی پر پیسے دے کر پروگرام کراتے ہیں۔چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ میں آپکو دو دستاویزات دے رہا ہوںکل انکا جواب لے آئیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں