نواز شریف کے زیر صدارت مسلم لیگ (ن) کے غیر مشاورتی اجلاس ہوا جس میں کئی سینئر رہنماؤں نے شہباز شریف کو وفاق میں لانے کی مخالفت کردی

اسلام آباد(سٹی نیوز) نواز شریف کے زیر صدارت مسلم لیگ (ن) کے غیر مشاورتی اجلاس ہوا جس میں کئی سینئر رہنماؤں نے شہباز شریف کو وفاق میں لانے کی مخالفت کردی ہے۔
سابق وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت مسلم لیگ(ن) کی مرکزی قیادت کا غیر مشاورتی اجلاس ہوا جس میں وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی،خواجہ سعد رفیق اور اسحاق ڈار سمیت چند اہم رہنما?ں نے شرکت کی۔ کئی سینئر رہنماؤں نے شہبازشریف کو پنجاب سے ہٹانے کی مخالفت کی ہے ، رہنماؤں کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کے پنجاب سے جانے سے پارٹی کونقصان ہوسکتاہے اور پارٹی کو وزرات اعلیٰ کے لئے ان کے متبادل کی تلاش مشکل ہو جائے گی اس لئے شہباز شریف کو پنجاب کی وزارت اعلیٰ پر رہنا چاہیے جبکہ بعض رہنماؤں کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کے وفاق میں آںے سے ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل ہوگی۔
دوسری جانب وفاقی کابینہ کی تشکیل کے حوالے سے مسلم لیگ(ن)کا مشاورتی اجلاس آج ہوگا جس میں کابینہ کے ارکان کی حتمی منظوری دی جائے گی ، کابینہ کی حتمی منظوری شہباز شریف کی مرکز منتقلی کے فیصلے کے بعد ہی دی جائے گی کیوں کہ شہباز شریف کے مرکز میں جانے سے کابینہ کی تشکیل اور ہوگی جبکہ ان کے وفاق نہ جانے کی صورت میں کابینہ کی تشکیل مختلف ہو گی، آئندہ 24گھنٹوں کے دوران کابینہ کا حتمی اعلان کردیا جائے گا جبکہ کابینہ کے ارکان جمعہ کو حلف اٹھائیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں