سیانے صحیح کہتے ہیں، میاں بیوی کی لڑائی میں مداخلت نہیں کرنی چاہیے، اس شخص نے کی تھی، پھر کیا انجام ہوا؟ جانئے

نیویارک(نیوز ڈیسک) میاں بیوی کے درمیاں جھگڑا ہو جائے تو ان کی صلح کروانے کی کوشش کرنا بہت ہی اچھی بات ہے، لیکن یہ نیک کام ذرا احتیاط سے ہی کیا جائے تو بہتر ہے کیونکہ بعض اوقات صلح کروانے والے کی ہی شامت آ جاتی ہے۔ امریکی ریاست کنیٹیکٹ میں پیش آنے والا افسوسناک واقعہ ایک ایسی ہی مثال ہے۔
نیوز ٹائمز کے مطابق ڈربی اور شیلٹن شہر کو آپس میں ملانے والے پل پر ایک جوڑے کو جھگڑتے دیکھ کر ایک نوجوان نے اصلاح احوال کی کوشش کی لیکن چند لمحے بعد ہی وہ بیچارہ 45 فٹ نیچے دریائے ہوساٹونک میں غوطے کھا رہا تھا۔ دراصل اس نوجوان کو بالکل اندازہ نہیں تھا کہ جھگڑالو شوہر غصے کے باعث نیم پاگل ہو رہا تھا۔ جب اس نے خاتون سے اظہار ہمدری کرتے ہوئے پوچھا کہ ”آپ ٹھیک ہیں؟“ تو اس کے شوہر نے بیوی کو چھوڑ کر اس کی مدد کو آنے والے نوجوان کو پکڑ لیا۔ اس نے نوجوان کو اتنے زور سے دھکا دیا کہ وہ حفاظتی باڑھ سے لڑھکتا ہوا دریا میں جا گرا۔ اس کی قسمت اچھی تھی کہ زندہ بچ گیا، تاہم بلندی سے گرنے اور غوطے کھانے کے باعث اس کی حالت غیر ہو چکی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں