امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن کو برطرف کروانے کی کوششوں کا انکشاف

واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن کو برطرف کروانے کی کوششوں کے بارے میں اہم انکشاف ہوا ہے ، برطانوی نشریاتی ادارے کا کہنا ہے کہ ریکس ٹلرسن کو برطرف کروانے کی کوشش اس لئے کی گئی تھی کیونکہ وہ قطر کے خلاف متحدہ عرب امارات کا ساتھ دینے میں ناکام رہے تھے۔
بی بی سی اردو کے مطابق انہوں نے ایسی افشا شدہ ای میلز حاصل کی ہیں جن سے ظاہر ہوتا ہے کہ بزنس مین ایلیٹ بروئڈی جوکہ عرب امارات سے منسلک ٹرمپ کا ڈونر ہے نے اکتوبر 2017 میں امریکی صدر سے ملاقات کر کے ان پر زور دیا تھا کہ وہ ٹلرسن کووزارت خارجہ سے برطرف کر دیں۔مزید ای میلز میں امریکی وزیرِ خارجہ کو جیلی کا مینار اور کمزور کہتے ہوے یہ بھی کہا کہ انہیں تھپڑ لگانے کی بھی ضرورت ہے۔بروئڈی نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ قطر نے ان کی ای میلز ہیک کی ہیں۔تا ہم قطری حکام نے ہیکنگ کے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ قطری حکومت ان الزامات کے خلاف قانونی کارروائی کا حق محفوظ رکھتی ہے۔
امریکا کو برطانیہ کے ساتھ قیمتی تعلقات پر توجہ دینا چاہیے: ریکس ٹلرسن
بروئڈی کی کمپنی سرسینس کے عرب امارات کے ساتھ کروڑوں ڈالر کے معاہدے ہیں۔اکتوبر میں صدر ٹرمپ سے ملاقات سے پہلے وہ قطر سے ہو کر آئے تھے۔ایک ای میل میں بروئڈی نے لکھا کہ انہوں صدر ٹرمپ کو مشورہ دیا کہ وہ ٹلرسن کو کسی سیاسی طور پر مناسب وقت پر برطرف کر دیں کیونکہ ان کی کارکردگی خراب ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں