قطری شہزادے حمد بن جاسم سے ملاقات میں ناکامی کے بعد دوحہ سے لندن روانہ ہو گئے

لندن (ویب ڈیسک) قطری شہزادے حمد بن جاسم سے ملاقات میں ناکامی کے بعد دوحہ سے لندن روانہ ہو گئے جہاں وہ متوقع طور پر پاناما لیکس کے حوالے سے اہم شخصیات سے ملاقاتیں اور مشاورت کریں گے۔
پاناما لیکس میں منی ٹریل ثابت کرنے کیلئے سپریم کورٹ میں پیش کردہ خطوط کے خالق قطری شہزادے سے ملاقات کیلئے دوحہ جانے والے وزیر اعظم نوازشریف کے صاحبزادے حسین اگلے ہی روز لندن پہنچ گئے۔ حسین نواز کی دوحہ روانگی کو قطری شہزادے حمد بن جاسم سے ملاقات سے جوڑا جا رہا تھا۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ دوحہ پہنچنے کے بعد حسین نواز نے حمد بن جاسم سے ملاقات کیلئے دوحۃ میں6 گھنٹے قیام کیا مگر دونوں کی ملاقات نہیں ہو سکی جس کے بعد حسین نواز برطانیہ چلے گئے ہیں جو وہاں 3روز تک قیام کریں گے۔
ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ حسین نواز کے علاوہ وزیر اعظم نوازشریف کے قریبی سمجھے جانے والے سیف الرحما ن بھی قطر سے لندن پہنچ چکے ہیں۔ حسین نواز سیف الرحمان سے مشاورت بھی کریں گے۔
واضح رہے حسین نے نواز گزشتہ روزقطر ایئر ویز کی پرواز کیو آر 615 سے صبح 10 بجے کے قریب دوحہ روانہ ہوئے تھے اور ان کی اچانک روانگی کو شہزادے حمد بن جاسم سے پاناما لیکس میں منی ٹریل کے حوالے سے ثبوت کے طور پر پیش کردہ خطوط پر مشاورت اور جے آئی ٹی کو بیان دیکر تصدیق کرنے سے جوڑا جا رہا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں