اسما قتل :گنے کے پتے پر خون کے قطرے سے ملزم پکڑا گیا

مردان(ویب ڈیسک )مردان میں زیادتی کے بعد قتل کی جانیوالی ننھی اسما کا کم عمر سفاک قاتل گنے کے پتے پر خون کے قطرے سے پکڑاگیاجس نے اعتراف جرم بھی کرلیا جبکہ عمران خان کاکہناہے کہ پروفیشنل خیبرپختونخوا پولیس کا کام قابل تحسین ہے۔

پشاور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے آئی جی پولیس خیبرپختونخوا صلاح الدین محسود نے بتایا کہ اسما قتل کیس میں ملزم محمد نبی نے اعتراف جرم کرلیا جس کی عمر15سال ہے ،مردان کی 4سالہ اسما کے قاتل کو 25روز کے اندر گرفتار کرلیاگیا،ملزم محمد نبی اسما کا پڑوسی اور کزن ہے جبکہ ملزم کا دوسرا ساتھی عبدالقادر بھی پولیس کی حراست میں ہے ، پولیس بچی کی گردن اورگنے کے پتے پر لگے خون اور ڈی این اے کی مدد سے ملزم تک پہنچنے میں کامیاب ہوئی۔ اسما کا قاتل محمد نبی ولد عبیدالرحمن ایک ریسٹورنٹ میں ملازم تھا اور وہ اس روز شادی کی تقریب میں شرکت کیلئے آیا ہوا تھا،دن کو3بجے اس نے بچی کو گھر جانے کیلئے کہا اور قریب ہی گنے کے کھیت میں لے گیا،جہاں اس نے بچی کیساتھ زیادتی کی کوشش کی جس پر بچی کی طرف سے مزاحمت اور چیخ وپکار پر ڈر کر بچی کا گلہ دبا دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں