چین کو بھارت کی بڑھتی جارحیت کے آگے بند باندھنے کی اشد ضرورت

بیجنگ( سٹی نیوز ) چین کے سرکاری میڈیا نے بھارت کو خبردار کیا ہے کہ وہ سرحد پر دراندازی اور چھیڑ چھاڑ سے باز رہے ورنہ بیجنگ حکومت ریاست سکم کی آزادی کی جدوجہد کی حمایت کرسکتی ہے۔بھارت سے نمٹنے کیلئے سکم کی آزادی کی حمایت کی جاسکتی ہے۔ مضمون میں چینی حکومت سے پرزور مطالبہ کیا گیا کہ وہ سکم کے معاملے پر اپنے موقف پر نظر ثانی کرے اور بھارت کو اشتعال انگیزیوں سے باز رکھنے کا اب یہی ایک طریقہ رہ گیا ہے جبکہ چین کو بھارت کی بڑھتی جارحیت کے آگے بند باندھنے کی اشد ضرورت ہے۔واضح رہے 1947ء میں مقبوضہ کشمیر کی طرح ریاست سکم کے عوام نے بھی استصواب رائے کے ذریعے بھارت میں شامل ہونے سے انکار کردیا تھا۔ 1950 ء میں بھارتی وزیراعظم جواہر لال نہرو کی حکومت نے دھونس زبردستی کے ذریعے ایک معاہدہ کرکے سکم کو اپنی باجگزار ریاست بنالیا۔ معاہدے کے تحت بھارت کو سکم کے دفاعی و خارجہ امور کے اختیا رات حاصل ہوگئے تاہم ریاست کو باقی تمام معاملات میں خودمختاری حاصل تھی۔ 1960ء اور 1970ء کے عشروں میں سکم ریاست میں آزادی کی تحریک نے زور پکڑ لیا تھا جسے بھارت نے پوری ریاستی طاقت سے کچل دیا پھر 1975 ء میں بھارت نے اپنی فوج اتار کر سکم کو باقاعدہ اپنی ریاست بنالیا۔ چین نے 2003 ء میں سکم کو بھارتی ریاست تسلیم کرلیا تھا ورنہ اس سے قبل وہ اسے مقبوضہ ریاست قرار دیتا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں