ایک امریکی خاتون پر عین اس کے ہیبت ناک موٹاپے کی وجہ سے نوٹوں کی بارش ہو رہی ہے

نیویارک (ویب ڈیسک) موٹاپہ ہلکا پھلکا بھی ہو تو انسان کے لئے خوب کوفت کا سبب بنتا ہے اور اگر کسی کا وزن ساڑھے چار من تک پہنچ جائے تو سوچئے زندگی کیسا عذاب ہو گی، لیکن جائے حیرت ہے کہ ایک امریکی خاتون پر عین اس کے ہیبت ناک موٹاپے کی وجہ سے نوٹوں کی بارش ہو رہی ہے۔
ریاست پنسلوانیا سے تعلق رکھنے والی 43 سالہ بوبی جو کا وزن 225 کلوگرام ہے اور چونکہ وہ دنیا میں سب سے بڑے کولہوں کا ورلڈ ریکارڈ قائم کرنا چاہتی ہے لہٰذا اپنے وزن میں اضافہ بدستور جاری رکھے ہوئے ہے۔ انٹرنیٹ پر اس کے مداح لاکھوں کی تعداد میں ہیں جو اس کی خوب حوصلہ افزائی کرتے ہیں اور اسے روزانہ ڈھیروں کھانا کھاتے ہوئے دیکھ کر خوش ہوتے ہیں۔ یہ مداح بوبی جو کی بسیار خوری اور برہنہ موٹاپے کو دیکھنے کے لئے ہر گھنٹے تقریباً 2ہزار ڈالر (تقریباً دو لاکھ پاکستانی روپے) اس پر نچھاور کررہے ہیں۔
بوبی جو کے کولہوں کی پیمائش 95انچ ہو چکی ہے لیکن وہ اسے 100 انچ کر کے ورلڈ ریکارڈ بنانا چاہتی ہے۔ یہ ریکارڈ اس وقت لاس اینجلس شہر سے تعلق رکھنے والی میکیل روفینیلی کے پاس ہے جس کے کولہوں کی پیمائش 99 انچ ہے
بوبی جو کا کہنا ہے کہ اس کی تمام آمدنی آن لائن مداحوں کی وجہ سے ہوتی ہے جو اس کی ویب سائٹ اور یوٹیوب چینل کو باقاعدگی سے دیکھتے ہیں۔و ہ اپنے مداحوں کے سامنے روزانہ ڈھیروں کھانا کھاتی ہے اور انہیں خوش کرنے کیلئے برہنگی کا مظاہرہ بھی کرتی ہے۔ بوبی جو کا کہنا ہے کہ اس کے مداح اسے بہت پسند کرتے ہیں اور اکثر اسے شادی کی پیشکش بھی کرتے ہیں لیکن وہ پہلے ہی شادی شدہ ہے۔
اس کا وزن اس قدر زیادہ ہوچکا ہے کہ اس کیلئے ہلنا جلنا بھی مشکل ہے اور وہ ہر وقت اپنے گھر پر رہتی ہے۔ ڈاکٹروں نے اسے خبردار کیا ہے کہ وہ فوری طور پر وزن کم کرے ورنہ اس کی جان کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے، مگر وہ تو ورلڈریکارڈ قائم کرنے کیلئے جنون میں مبتلا ہے اور اپنا وزن کم کرنے کی بجائے مزید بڑھانے کی کوشش کررہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں