پی سی بی کی جانب سے تمام کھلاڑیوں کو فی کس 10 ہزار ڈالر (تقریباً 10 لاکھ پاکستانی روپے) دینے کی پیشکش کی گئی

لندن (سٹی نیوز) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) اگلے ماہ ورلڈ الیون کا دورہ پاکستان ہر صورت یقینی بنانے کیلئے سخت جدوجہد میں مصروف ہے اور اب یہ انکشاف ہوا ہے کہ پی سی بی کی جانب سے غیر ملکی کھلاڑیوں کو پاکستان آ کر 3 میچ کھیلنے کیلئے کروڑ روپے کی پیشکش کر دی ہے۔
انگلینڈ کے سابق کوچ اور زمبابوے کے کھلاڑی اینڈی فلاور کو ورلڈ الیون کا کوچ مقرر کر دیا گیا ہے جس نے اگلے ماہ پاکستان کا دورہ کرنا ہے اور 6 روز کے دوران 3 میچ کھیلنے ہیں۔ ہر پاکستانی اس دورے کی اہمیت سے واقف ہے کیونکہ اس کے باعث پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کی راہیں ہموار ہوں گی اور مستقبل میں کسی ٹیم کے پاکستان آنے کی امیدیں روشن ہو جائیں گی۔
رپورٹ کے مطابق اینڈی فلاور ہی اس ٹیم کے کھلاڑیوں کا انتخاب کریں گے جو لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں 3 ٹی 20 انٹرنیشنل کھیلے گی۔ اس حوالے سے فیڈریشن آف انٹرنیشنل کرکٹرز ایسوسی ایشن کو سیکیورٹی رپورٹ بھی بھیجی جائے گی جو کھلاڑیوں کو بتائے گی کہ پاکستان جان محفوظ ہے یا نہیں۔
رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ پی سی بی کی جانب سے تمام کھلاڑیوں کو فی کس 10 ہزار ڈالر (تقریباً 10 لاکھ پاکستانی روپے) دینے کی پیشکش کی گئی ہے۔ اس طرح اگر کھلاڑیوں کی تعداد دیکھی اور سکواڈ میں شامل دیگر لوگوں کا اندازہ کیا جائے تو یہ رقم کروڑوں میں پہنچ جاتی ہے جبکہ ان میچوں کیلئے انتظامات پر آنے والے اخراجات اس کے علاوہ ہوں گے۔
ذرائع کے مطابق کسی بھی ملک میں صرف 3 ٹی 20 انٹرنیشنل میچ کھیلنے کیلئے جانے والے غیر ملکی کھلاڑیوں کیلئے یہ رقم بہت زیادہ ہے اور پی سی بی کو یقین ہے کہ کھلاڑی ناصرف اس پیشکش پر غور کریں گے بلکہ متعدد کھلاڑی پاکستان آنے پر آمادہ بھی ہو جائیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں