افریقی ملک نائیجیریا میں پولیس نے ایک شیطان صفت امام مسجد کو گرفتار کرلیا

ابوجہ (ویب ڈیسک) افریقی ملک نائیجیریا میں پولیس نے ایک ایسے شیطان صفت امام مسجد کو گرفتار کرلیا ہے جو اپنے سات ساتھیوں کے ساتھ مل کر ایک کمسن لڑکی کو کئی ماہ تک زیادتی کا نشانہ بناتا رہا جس کے نتیجے میں لڑکی حاملہ ہوگئی ہے۔
ویب سائٹ ’ورلڈ وائڈ وئیرڈ نیوز‘ کے مطابق کدونا شہر کی پولیس کا کہنا ہے کہ امام مسجد اور اس کے ساتھیوں نے 13 سالہ لڑکی کو بلیک میل کر کے درندگی کا نشانہ بنانے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا تھا ۔ انہوں نے لڑکی کو اپنے چنگل میں پھنسانے کے بعد جان سے مارنے کی دھمکیاں دے کر خاموش کروا رکھا تھا اور گزشتہ چند ماہ کے دوران درجنوں بار زیادتی کا نشانہ بنا چکے تھے۔
جب کمسن لڑکی کا ہسپتال میں معائنہ کیا گیا تو پتہ چلا کہ وہ پانچ ماہ کی حاملہ ہے اور اس کے رحم میں جڑواں بچے پرورش پارہے ہیں۔ پولیس نے آٹھوں ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے جبکہ لڑکی کے اسقاط حمل کے فیصلے کے لئے ڈاکٹروں کی ایک کمیٹی قائم کردی گئی ہے جو اس کی صحت و جسمانی حالت کا تفصیلی معائنہ کرنے کے بعد فیصلہ کرے گی کہ اسقاط حمل کرنا ممکن ہے یا نہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں