طیارہ حادثہ رپورٹ 22 جون کو قومی اسمبلی میں پیش کی جائے گی: غلام سرور خان

اسلام آباد: ( سٹی نیوز) وفاقی وزیر ہوابازی غلام سرور خان نے کہا ہے کہ کراچی طیارہ حادثے کے رپورٹ 22 جون کو قومی اسمبلی میں پیش کی جائے کی۔ ماضی میں طیاروں کو 6 حادثات پیش آئے جن کی انکوائری رپورٹ سامنے نہیں لائی گئیں۔

قومی اسمبلی میں جاری اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر ہوابازی غلام سرور خان کا کہنا تھا کہ طیارہ حادثے کے نقصانات کا جائزہ لیا جا رہا ہے، انشااللہ ازالہ کیا جائے گا. لاشوں کی شناخت مشکل تھی، اس کے باوجود تمام مراحل کے دوران محنت کے بعد 95 افراد کو شناخت کر لیا گیا۔ جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین کو 10 لاکھ فی کس دیئے گئے، کچھ خاندانوں نے امداد لینے سے انکار کیا۔

انہوں نے کہا کہ پی آئی اے میں 546 افراد کو سیاسی طور پر جعلی ڈگریوں پر نوکریاں دی گئیں۔ پائلٹس جعلی لائسنسوں میں ملوث رہے، سپریم کورٹ کے حکم پر پائلٹس کی ڈگریاں چیک کرنے کا کہا گیا۔ 422 ارب کا خسارہ کم کر کے 1 ارب پر لے آئے۔ موجودہ 6 ارب کا خسارہ ہماری نہیں کورونا وائرس کی وجہ سے ہوا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں