رزق میں کشادگی اور کاروبار میں ترقی کا وہ نسخہ کیمیا جو ایک دعا میں چھپا ہوا ،اس دعا کی تسبیح کرنے والوں پر دنیا تنگ نہیں ہوتی

رزق و حیات اللہ کی عطا ہے۔وہ کیڑے مکوڑوں کو بھی رزق عطا کرتا ہے تو انسانوں کے رزق کا بندوبست کرنا بھی اسکی قدرت ہے۔جن لوگوں کا ایمان کمزور ہوتا ہے وہ رزق کے معاملے پر اپنے زور بازو پر یقین رکھتے ہیں ۔حالانکہ قرآن مجید میں رازق ہونے کی دلیل اللہ کریم نے خود ارشاد فرمائی ہے اور انسان کے اس گھمنڈ پر اسکی سرزنش کی ہے ۔جو لوگ ا س بات پر ایمان رکھتے ہیں کہ انسان کو حیلہ وسیلہ کرنا چاہئے ، رزق کا سارا بندوبست اللہ فرماتا ہے، انہیں اللہ سبحان تعالیٰ کا شکر بجالاتے ہوئے یہ دعا لازمی پڑھنی چاہئے۔اس دعا کا یہ وہ فائدہ ہوتا ہے کہ ایسا انسان مزید روحانی طور پر مضبوط ہوتا اور اس کے لئے رزق کی تنگی نہیں رہتی۔اسکا ایمان ہوتا ہے کہ جس نے خلق کیا ہے رزق بھی وہی دے گا اور یہ مقدر کتاب روشن میں لکھ دیا گیا ۔
دعائے گنج العرش میں موجود یہ دعا تسبیح کے طور پر روزانہ ایک سو بار پڑھنے کا معمول بنانے والوں پر رزق کی بندش نہیں ہوتی، وہ دوسروں کے محتاج نہیں رہتے ۔انہیں جسمانی اور روحانی تکالیف نہیں ہوتیں۔ان کے کاروبار پر زوال نہیں آتا،کاروباری ڈیل کرتے ہوئے انہیں کامیابی حاصل ہوتی ہے۔انہیں خزانہ غیب سے رزق ملتا ہے۔جن کی ترقی رکی ہو،قرضہ ادا کرنا ہو تو ایسے لوگ یہ دعا باقاعدگی سے پڑھا کریں ۔
لا الہ الا اللہ سبحان الخالق الرزاق

اپنا تبصرہ بھیجیں