اپنے گھر سے لاکھوں روپے چرائے اور چپکے سے محلے کے بچوں میں بانٹ دئیے

برلن (ویب ڈیسک) بچوں کی تربیت میں کمی رہ جائے تو وہ اپنے گھر سے ہی چوریاں کرنے لگتے ہیں۔ عموماً یہ چھوٹی موٹی چوریاں ہوتی ہیں جو چند سو روپوں تک ہی محدود رہتی ہیں، لیکن ایک جرمن بچے نے سب ریکارڈ توڑتے ہوئے اپنے گھر سے لاکھوں روپے چرائے اور چپکے سے محلے کے بچوں میں بانٹ دئیے۔
لڑکے کا تعلق جرمن شہر بارڈ ٹولز سے ہے اور اس کے والدین کو یہ پتا چلانے میں خاصی دیر ہو گئی کہ بچہ گھر سے رقم چرا کر اپنے دوستوں میں بانٹ رہا تھا۔ اس نے یہ رقم محلے میں اپنے دوستوں اور فٹ بال کلب کے ساتھیوں میں تقسیم کی۔ لڑکے کا کہنا تھا کہ وہ مشہور ہونا چاہتا تھا اور نئے دوست بنانا چاہتا تھا جس کے لئے گھر سے رقم چرا کر محلے کے لڑکوں میں بانٹتا تھا۔
پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکے نے تقریباً 10500 یورو کی رقم تقسیم کی ہے، جس میں سے ابھی تک 4500 یورو واپس لئے جاسکے ہیں۔ لڑکے کے والدین کا کہنا ہے کہ انہوں نے اسے گھر سے رقم لیجانے یا تقسیم کرنے کی اجازت نہیں دی تھی اور نہ ہی انہیں معلوم تھا کہ وہ ایسا کام کر رہا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں