کچا مندھری کے علاقے میں ڈاکوؤں نے رات گئے تاوان کی نیت سے تین گھروں پر قبضہ کرلیا

راجن پور (سٹی نیوز) کچا مندھری کے علاقے میں ڈاکوؤں نے رات گئے تاوان کی نیت سے تین گھروں پر قبضہ کرلیا۔ واقعے کی اطلاع ملنے پر پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور ڈاکوؤں کا مقابلہ شروع کردیا۔ ڈاکوؤں کی فائرنگ کے نتیجے میں ایس ایچ او گوٹھ مزاری سمیت 3 افراد شہید جبکہ 6 افراد زخمی ہوگئے۔ایلیٹ فورس اور رینجرز کے آنے پر ڈاکو گھروں کا قبضہ چھوڑ کر فرار ہوگئے۔
تفصیلات کے مطابق راجن پور کے کچے کے علاقے کچا مندھری میں ڈاکو?ؤں نے ایک مہینے کے دوران چوتھی واردات کی اور تین گھروں پر قبضہ کرلیا۔ ڈاکو یہاں تاوان لینے کیلئے آئے تھے تاہم اہل علاقہ نے مزاحمت کی جس پر انہوں نے گھروں میں داخل ہو کر بچوں اور خواتین کو یر غمال بنالیا۔ ڈاکوؤں کی اطلاع ملنے پر مقامی ایم پی اے اپنے 100 مسلح افراد کے ہمراہ جائے وقوعہ پر پہنچ گیا اور ڈاکوؤں کا مقابلہ شروع کردیا۔ واردات کا پتہ چلنے پر پولیس کی بھاری نفری بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی۔ دونوں اطراف سے فائرنگ کا شدید تبادلہ ہواجبکہ ڈاکوؤں کی فائرنگ سے ایس ایچ او سمیت 3 افراد شہید ہو گئے اور 3 پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد زخمی بھی ہوئے۔ صورتحال زیادہ خراب ہونے پر ایلیٹ فورس اور رینجرز کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور ڈاکوؤں کا مقابلہ شروع کردیا۔ کافی دیر تک مقابلہ جاری رہنے کے بعد ڈاکو تینوں گھروں کا قبضہ چھوڑ کر فرار ہوگئے۔
واضح رہے کہ انہی علاقوں میں چھوٹو گینگ کا راج تھا جو قتل ، دہشتگردی اور اغوا برائے تاوان جیسی سنگین وارداتوں میں ملوث تھا۔ پولیس نے گزشتہ سال چھوٹو گینگ کے خلاف آپریشن کیا جس کے نتیجے میں پولیس کو بھاری نقصان اٹھانا پڑا جس کے بعد پاک فوج کو میدان میں آنا پڑا تھا۔ پاک فوج کے آنے پر ڈاکوؤں نے ہتھیار ڈال کر خود کو قانون کے حوالے کردیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں