”جب میں چوتھی کلاس میں پڑھتی تھی تو میری خاتون ٹیچر مجھے ایک کمرے میں لے گئی اور میری قمیض اٹھا کر۔۔۔“ شیریں مزاری کی بیٹی نے اپنے ساتھ پیش آنے والا انتہائی شرمناک واقعہ بیان کردیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) تحریک انصاف کی مرکزی رہنما شیریں مزاری کی صاحبزادی ایمان زینب حاضر مزاری نے بتایا ہے کہ جب وہ چوتھی کلاس میں پڑھتی تھیں تو انہیں ایک خاتون ٹیچر کی جانب سے ہراساں کیا گیا۔
ٹوئٹر پر ایمان مزاری نے بتایا کہ ان کے والدین نے گھر میں کبھی بھی کسی مرد کو ملازم نہیں رکھا یہاں تک کہ انہیں قرآن پاک سیکھنے کیلئے بھی ایک خاتون معلمہ کے پاس بھیجا گیا، جب بھی کسی قسم کی ہوم ٹیوشن ہوتی تو ان کے والد اس وقت تک کمرے میں بیٹھے رہتے جب تک پڑھائی ختم نہ ہوجاتی ، ’میں اور میرا بھائی جب بھی گھر سے باہر جاتے تھے تو والدین ہمیشہ ہمارے ساتھ جاتے تھے لیکن اس کے باوجود جب میں چوتھی جماعت میں پڑھتی تھی تو میرے پرائیویٹ سکول میں انگریزی کے مضمون کی خاتون استاد مجھے ایک خالی کلاس روم میں لے گئیں اور کہا کہ اپنی شرٹ اٹھاﺅ تاکہ چکن پاکس دیکھے جا سکیں‘۔

اپنا تبصرہ بھیجیں