سینئر صحافی و تجزیہ کار ضیا شاہد نے انکشاف کیا کہ برما میں چین کی مداخلت موجود ہے

لاہور (ویب ڈیسک) سینئر صحافی و تجزیہ کار ضیا شاہد نے انکشاف کیا کہ برما میں چین کی مداخلت موجود ہے اور وہ پاکستان کی طرح وہاں بھی گوادر ٹو بنا رہا ہے تا کہ برما کے ذریعے خلیج بنگال و بحر ہند تک پہنچ سکے۔ یہ بھی انکشاف کیا کہ انتہا پسندی کے باعث چین نے اپنا کنٹرول سخت کر لیا جبکہ امریکی نیوز ایجنسی بھیمیری بات کی تصدیق کرچکی ہے۔ اس کی خبر کے مطابق امریکہ نے کہا ہے کہ چینی صدر نے برما کی وزیراعظم کو کہا ہے کہ کارروائیوں کو مزید سخت کر دے۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ضیاء شاہد کاکہناتھاکہ میں پہلے بھی کہہ چکا ہوں کہ چینی صدر کے ایک فون پر برما میں قتل عام رک سکتا ہے، ہم سب کو مل کر اپنے بہترین دوست ملک سے درخواست کرنی چاہئے کہ وہاں مظلوم مسلمانوں کا قتل عام بند کیا جائے۔ میں یہ نہیں کہتا کہ چین اس کا ذمہ دار ہے بلکہ یہ کہا ہے کہ وہ ایک فون کال کے ذریعے یہ کام کر سکتا ہے۔ پرامن برما کیلئے چین نے ہمیشہ حمایت کی ہے، ہم بھی امن چاہتے ہیں لیکن اس کا مطلب لوگوں کو اس طرح ذبح کرنا نہیں ۔

انہوں نے کہاکہ چینی پالیسی ساز سمجھتے ہیں کہ چونکہ روہنگیا میں اتنی زیادہ سرمایہ کاری کر لی ہے، اب کہیں وہاں موجود انتہا پسند مسلمانوں کی مدد کے لئے پوری دنیا سے لوگ آنا شروع نہ ہو جائیں۔ انتہا پسندی کی حمایت ہم بھی نہیں کرتے لیکن جو ایسے نہیں ہیں ان کا کیا قصور ہے؟۔

اپنا تبصرہ بھیجیں