پاکستان کا دشمن عراق کا دشمن ہے

اسلام آباد(سٹی نیوز) پاکستان میں تعینات عراقی سفیر علی یاسین محمد کریم نے کہا ہے کہ داعش کو شکست فاش دینے اور موصل کی شاندار فتح کیلئے پاکستان کا تعاون اساسی حیثیت رکھتا ہے اگر پاکستان کی جانب سے عراقی فوج کو تربیت، انٹیلی جنس معلومات اور اسلحہ کی فراہمی نہ ہوتی تو موصل کی فتح مشکل ہو جاتی۔ داعش بین الاقوامی دہشتگرد تنظیم ہے، پاکستان کا دشمن عراق کا دشمن ہے، سعودی عرب اور قطر کے تنازع میں عراق غیر جانبدار رہے گاجبکہ پاکستان کی غیر جانبداری کی پالیسی مناسب ہے۔
اسلام آباد میں عراقی سفارت خانے میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان میں تعینات عراقی سفیر علی یاسین محمد کریم کا کہنا تھا کہ پاک فضائیہ کی جانب سے دہشتگردوں کی نقل وحرکت کیلئے فضائی نگرانی اورعراقی فضائیہ کے ہوابازوں کو تربیت نے بھی عراقی فتح میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ داعش ایک خطرناک ترین بین الاقوامی تنظیم ہے، جس نے موصل پر 10 جون 2015 میں قبضہ کیا، عراقی عوام نے مذ ہب، نسل اور فرقہ سے بالا تر ہو کر داعش کو شکست دینے میں مدد کی، داعش کے دہشت گرد دنیا میں ایک سو سے زائد ممالک سے تعلق رکھتے تھے۔عراقی سفیر کا کہنا تھا کہ اب ایک فیصد داعش موجود ہے، صرف موصل ہی نہیں دیگر کئی شہروں میں بھی داعش موجود ہے، داعش کے خلاف جنگ میں ہمارے ہمسایہ ممالک نے ہماری بہت مدد کی، پاکستان نے بھی اس لڑائی میں ہمارا ساتھ دیا، داعش نے انسانوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کی اور ہزاروں عراقیوں کا قتل عام کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں