بھارت ایک ایسا ملک ہے جو علم اور تجربے میں باقی دنیا سے 20سال پیچھے

نئی دہلی(ویب ڈیسک)باسکٹ بال کا عالمی شہرت یافتہ امریکی کھلاڑی کیوین ڈیورینٹ بھارت دورے پر گیا اور واپسی پر بھارت کے متعلق ایسی بات کہہ دی کہ بھارتی پوری دنیا کے سامنے شرم سے پانی پانی ہو گئے۔ کیوین ڈیورینٹ نے کہا کہ ’’میں جب بھارت جا رہا تھا تو میرے ذہن میں تھا کہ میں کسی بہت خوبصورت ملک جا رہا ہے جو دبئی جیسا ہو گا، لیکن جب میں وہاں پہنچا تو مجھے ایک شدید جھٹکا لگا۔ بھارت میں اترتے ہی جب میں نے ان کی ثقافت اور رہن سہن کا انداز دیکھا تو میں حیران رہ گیا۔ وہ ہر لحاظ سے بے حد پسماندگی کا شکار ہیں۔‘‘
کیوین نے مزید لکھا کہ ’’بھارت ایک ایسا ملک ہے جو علم اور تجربے میں باقی دنیا سے 20سال پیچھے ہے۔ گلیوں میں ہر طرف گائیں آزادانہ گھومتی پھر رہی ہیں، ہر جگہ بندر اچھلتے کودتے پھرتے ہیں۔ سڑکوں پر دونوں طرف لوگوں کا ایک اڑدہام ہوتا ہے۔ ہر سڑک پر کیچڑ اور گندگی کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں۔ میں تاج محل دیکھنے بھی گیا جو دنیا کا ساتواں عجوبہ ہے۔ یہاں بھی مجھے مایوسی ہوئی۔ اس کی طرف جانے والی سڑک پر بھی کیچڑ تھا اورگائیں اور آوارہ کتوں کی بہتات تھی۔ اطراف میں گندگی کے ڈھیربھی لگے تھے۔ میں وہاں باسکٹ بال کی ترویج کے لیے گیا تھا لیکن چند مفلوک الحال قسم کے لوگ ہی مجھ سے یہ کھیل سیکھنے کے لیے آئے۔‘‘

اپنا تبصرہ بھیجیں