جلسے جلوسوں میں ’ کرائے کے بندوں‘ کی خدمات حاصل نہیں کی جائیں گی

کراچی (سٹی نیوز) سیاسی پارٹیاں ایک دوسرے پر اکثر اوقات کرائے کے بندوں سے اپنے جلسوں کی رونقیں بڑھانے کا الزام لگاتی ہی رہتی ہیں لیکن اب ’’کرائے کے بندوں‘‘ کی ایک ویڈیو بھی سامنے آگئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ بہت سے لوگ اپنے قائدین کا استقبال کرنے کیلئے پارٹی کے جھنڈے پکڑے کھڑے ہیں لیکن انہیں یہ نہیں پتا کہ ان کا قائد کون ہے۔
یہ ویڈیو کراچی سے سامنے آئی ہے، جو کہ مسلم لیگی دھڑوں کے اتحاد کے مشن پر نکلے ق لیگ کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین کے استقبال کے وقت بنائی گئی ہے۔ ہوا کچھ یوں کہ بدھ کے روز چوہدری شجاعت حسین مسلم لیگی دھڑوں کے اتحاد کا مشن لے کر کراچی پہنچے تو مقامی قیادت نے ایئر پورٹ پر ان کے استقبال کیلئے ’ کرائے کے بندوں‘ کا انتظام کیا اور خوب ڈھول پیٹا۔
ایسے میں کوریج کیلئے آئے ایک صحافی کی حسِ تجسس جاگی اور وہ موبائل کیمرہ لے کر پرجوش کارکنان کے پاس جا پہنچا اور باری باری سب سے سوالات کرنے شروع کردیے کہ وہ کس کے استقبال کیلئے آئے ہوئے ہیں۔ ان پر جوش کارکنوں کو جنہوں نے پارٹی کے جھنڈے بھی اٹھائے ہوئے تھے یہ بھی پتہ نہیں تھا کہ وہ کس پارٹی کا جھنڈا پکڑے کھڑے ہیں یا کس کے استقبال کیلئے آئے ہوئے ہیں۔یہ ویڈیو منظر عام پر آتے ہی سوشل میڈیا پر تیزی کے ساتھ وائرل ہو رہی ہے اور ق لیگ کی خوب بھد اڑائی جا رہی ہے۔
یہ ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد اب یا تو یہ ہوگا کہ جلسے جلوسوں میں ’ کرائے کے بندوں‘ کی خدمات حاصل نہیں کی جائیں گی یا پھر کم از کم یہ ضرور ہوگا کہ ’ کرائے کے بندوں‘ کو کسی بھی جلسے جلوس میں لے جانے سے پہلے تسلی بخش بریفنگ دے کر ان کے وقتی قائد اور کرایہ حاصل کرنے کے مقصد سے ضرور آگاہ کیا جایا کرے گا

اپنا تبصرہ بھیجیں