بیوپاریوں کے روپ میں دہشتگردوں کے سہولت کاروں اور مشتبہ افراد کی آمدو رفت بھی جاری

لاہور (سٹی نیوز) قربانی کے جانوروں کی آمدورفت کی آڑ میں ممنوعہ اشیاء ، جاسوسی آلات، جدید امریکی اسلحہ، گولیاں، ہینڈ گرینیڈ، ٹائم ڈیوائس بم وغیرہ سمگل کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔ بعض بیوپاریوں کے روپ میں دہشتگردوں کے سہولت کاروں اور مشتبہ افراد کی آمدو رفت بھی جاری ہے۔ لاہور سمیت پنجاب بھر میں چلنے والے متعدد ٹرالرز اور ٹرک مالکان کے مختلف کالعدم تنظیموں سے روابط ہیں۔
حساس اداروں نے مشکوک افراد کی فہرستیں مرتب کرنا شروع کر دی ہیں۔ عید پر قربانی کے لئے جانوروں کو ٹرکوں، ہیوی ٹرالرز اور لوڈرز گاڑیوں پر لاہور، میانوالی، مریدکے، فیصل آباد، اسلام آباد، سرگودھا، راولپنڈی، گجرات، ساہیوال، منڈی بہاؤالدین، شیخوپورہ، گوجرانوالہ، شرقپور، نارووال، شکر گڑھ اور دیگر شہروں کی منڈیوں میں منتقل کیا جا رہا ہے، ان میں سے بعض مال بردارگاڑیوں کے مالکان جانوروں کی آڑ میں اسلحہ اوردیگر ممنوعہ اشیا وغیرہ بھی لے جاتے ہیں، پولیس ناکوں اور چیک پوسٹوں پر بھی عام طور پر ایسے ٹرالرز اور ٹرکوں کو چیک نہیں کیا جاتا جبکہ پولیس اہلکار پیسے لیکر مک مکا کرتے ہیں، پنجاب میں آنیوالے متعدد ٹرکوں اور ہیوی ٹرالرزکے مالکان کا تعلق سوات، مینگورہ، شمالی وزیرستان، خیبر پختونخوا اور ڈیرہ غازی خا ن سے ہے، انکے ڈیروں پر مشتبہ افراد کا آنا جانا ہے جبکہ یہ مشتبہ افراد اور سہولت کاروں کو بھی سامان کی آڑ میں مختلف شہروں میں منتقل کرچکے ہیں
بعض مشتبہ افرادکے جعلی شناختی کارڈ اور ڈرائیونگ لائسنس بنوا کر ڈرائیور، ہیلپر یا بیوپاری کے روپ میں شہروں کے اندر داخل ہونے کی اطلاعات بھی ملیں ہیں۔ سگیاں پل کے قریب حالیہ دہشتگردی میں استعمال ہونیوالے ٹرک کے تین ایجنٹوں کو حراست میں لیا گیا ہے جبکہ ٹرک کا نمبرجعلی تھا اور تاحال اس کا اصل مالک ٹریس نہیں ہوسکا، عید سے قبل مختلف شہروں میں پولیس کی عارضی چوکیاں قائم کرنے پر غور کیا جا رہا ہے جبکہ لاہورسمیت تمام شہروں کی مویشی منڈیوں میں بیوپاریوں کی بھی مکمل جانچ پڑتال کی جائیگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں