ایسی تبدیلی نہیں چاہئے کہ چھوٹے چھوٹے بچوں کو سکول بھیجنے کی بجائے دہشتگردقرار دیکر ماردیاجائے :بھائی مقتول خلیل

لاہور (نیوز ڈیسک)سانحہ ساہیوال میں جاں بحق خلیل کے بھائی جلیل نے کہاہے کہ اگر ہمیں انصاف نہ ملا تو پھر ہم پرامن طور پر دھرنا دیں گے ، چاہے اس میں26سال لگ جائیں یا 126سال ہم پر امن دھرنا دیں گے ، ہم دہشتگرد نہیں ہیں ،ایسی تبدیلی نہیں چاہئے کہ چھوٹے چھوٹے بچوں کو سکول بھیجنے کی بجائے دہشتگردقرار دیکر ماردیاجائے۔

جلیل نے کہا کہ اگر ہمیں انصاف نہ ملا تو پھر ہم پرامن طور پر دھرنا دیں گے ، ہم دہشتگرد نہیں ہیں ، ہم پر امن دھرنا دیں گے ، چاہے اس میں26سال لگ جائیں یا 126سال، ہم پر امن دھرنا دیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان تبدیلی کا نعرہ لگاتے ہیں لیکن ہم کوایسی تبدیلی نہیں چاہئے کہ چھوٹے چھوٹے بچوں کو سکول بھیجنے کی بجائے دہشتگردقرار دیکر ماردیاجائے ، اب رات کا ایک بج گیا اور چھوٹے چھوٹے بچے مجھے سے مطالبہ کرتے ہیں کہ چاچو ہمیں ماما اور پاپا کولادو ، ا ب میں ان کوماما پاپا کہاں سے لاکر دوں ۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیر قانون نے کہا تھا کہ مقتولین کے ورثا ءکو اگر وہ قصور وار نہ پائے گئے دوکروڑ روپیہ دیں گے لیکن میں کہتا ہوں کہ ہم سے ڈھائی کروڑ روپیہ لے لیں لیکن میرے بھائی ، بھاوج اوربھتیجی کو واپس لا دیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں