سابق ایس ایس پی ملیر کی پیشی, راﺅ انوار کی آمد سے پہلے سپریم کورٹ میں سیکیورٹی اہلکاروں نے اچانک کیا کام شروع کردیا؟ حیران کن انکشاف

اسلام آباد(ویب ڈیسک) نقیب اللہ محسود قتل کیس میں مفرور سابق ایس ایس پی ملیر گزشتہ روز سپریم کورٹ میں پیش ہوگئے جہاں عدالت نے ان کی حفاظتی ضمانت کی درخواست مسترد کرتے ہوئے گرفتار کروادیاتاہم توہین عدالت کا نوٹس واپس لیتے ہوئے منجمد اکاﺅنٹس بھی بحال کرنے کا حکم دیدیا۔
سینئر صحافی عدیل وڑائچ نے بتایاکہ ’راﺅ انوار کی پیشی کا بظاہر علم نہیں تھا، سماعت میں بریک ہوئی اور جج صاحبان چیمبر میں گئے تو ہم باہر آگئے کہ آج بالکل ٹھنڈ ہے، ہائی پروفائل کیسز بھی نہیں ،یوم پاکستان کی تقریبات کے سلسلے میں موبائل سگنل بھی بند تھے، معمول کی سیکیورٹی تھی لیکن اچانک پتہ چلا کہ سیکیورٹی انتہائی سخت کردی گئی
ذرائع نے بتایاکہ کوئی ہائی لیول موومنٹ ہے ، معمولی افسر کی غیرمعمولی پیشی ہوئی ، جب ہم باہر گئے تو پتہ چلا کہ راﺅ انوار پارکنگ کی کسی گاڑی میں موجود ہیں، ہم ایسی جگہ کھڑے ہوگئے کہ چاروں دروازوں میں سے کہیں بھی پیشی ہوئی توپتہ چل جائے گا، پارکنگ کے پیچھے والے دروازے سے لائے اور یہ دروازہ صرف شاہراہ دستورپر دھرنوں کی وجہ سے اس وقت کے چیف جسٹس ناصرالملک کے لیے وہ صرف کھلتے دیکھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں