4گھنٹے سے جہاز میں بیٹھے مسافروں کو عملے نے اُتارنے کا کہا تو سب نے انکار کر دیا لیکن پھر پائلٹ نے جہاز کی ایسی چیز اون کردی کہ فوراً سب نے باہر دوڑ لگا دی

کولکتہ(نیوز ڈیسک) پرواز کی روانگی میں تاخیر ہو جائے تو مسافروں کا احتجاج فطری بات ہے۔ ایسے میں ائرلائن مسافروں سے معذرت بھی کرتی ہے اور بعض اوقات ان کے نقصان کا ازالہ بھی کیا جاتا ہے لیکن بھارت میں ایک پرواز لیٹ ہونے پر مسافروں نے احتجاج کیا تو کپتان نے انہیں ایسی سزا دے ڈالی کہ بیچارے ساری عمر یاد رکھیںگے۔
خلیج ٹائمز کے مطابق ائرایشیا انڈیا کی پرواز i5583 کو صبح نو بجے کولکتہ ائرپورٹ سے روانہ ہونا تھا لیکن یہ پرواز جب ایک بجے تک بھی اڑان نا بھر سکی تو مسافروں کا صبر جواب دے گیا اور وہ احتجاج کرنے لگے۔ اتنے طویل انتظار اور کوفت کے بعد مسافروں نے احتجاج کیا تو کپتان کو اس پر بھی غصہ آ گیا اور اس نے مسافروں کو حکم دیا کہ وہ طیارے سے باہر نکل جائیں۔ اب باہر تیز بارش ہو رہی تھی اورمسافروں کے لئے ایسی حالت میں باہر نکلنا ممکن نہیں تھا لیکن اس کے باوجود کپتان بضد تھا کہ وہ باہر نکلیں۔ جب مسافروں نے پس و پیش کا اظہار کیا تو کپتان نے طیارے کے ائرکنڈیشنر کا درجہ حرارت اس قدر کم کر دیا کہ بیچارے مسافروں کی قلفی جمنے لگی۔ اس عجیب و غریب واقعے کی ویڈیو بھی سامنے آگئی ہے جس میں طیارے کے اندر دھند سی بھری نظر آتی ہے جبکہ سردی سے ٹھٹھرتے مسافر اپنی سیٹوں میں دبکے نظر آتے ہیں۔ کچھ مسافروں کی طبیعت بھی خراب ہو گئی اور خصوصاً بچوں و خواتین کا تو بہت ہی برا حال ہوا۔
دوسری جانب ائرلائن کا کہناہے کہ طیارے میں ائرکنڈیشنر ضرور چلایا گیا تھا لیکن اس کا درجہ حرارت اتنا کم نہیں تھا کہ مسافروں کے لئے کسی قسم کے خطرے کا سبب بنتا ہے۔ ائرلائن نے طیارے میں دھند کے مناظر کی بھی یہ وضاحت دی ہے کہ اندر نمی زیادہ ہونے کی وجہ سے ائرکنڈیشنر کی ٹھنڈی ہوا دھند کی شکل اختیار کر گئی تھی اور یہ کہ اس میں کوئی غیر معمولی بات نہیں تھی

اپنا تبصرہ بھیجیں