راجہ ظفرالحق، سعد رفیق، خواجہ آصف اور پرویز رشید کی موجودگی میں چیف جسٹس نے عمران خان کی تعریف کردی، جان کر کپتان خوشی سے پھولے نہیں سمائیں گے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) انتخابی اصلاحات ایکٹ کے خلاف درخواستوں کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے سیاسی رہنماﺅں کی تقریروں اور جوشِ خطابت کی بھی تعریف کی۔
درخواستوں کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کہا کہ ’عمران خان نے گزشتہ روز بڑی اچھی تقریر کی ، خواجہ سعد رفیق نے بھی تقریر کی ، تقریر ہمارے پاس پہنچ جاتی ہے ۔ خواجہ سعد رفیق اچھے مقرر ہیں اور بڑی اچھی تقریر کرتے ہیں ، باہر ان کے سامنے مجمع ہوتا ہے، ٹی وی پر آکر ہم انہیں جواب نہیں دے سکتے لیکن یہاں سعد رفیق کو سن کر ہم بات بھی کریں گے‘۔

خواجہ سعد رفیق کا ’ لوہے کے چنے‘ والا بیان تو آپ کو یاد ہوگا؟ اب چیف جسٹس نے خواجہ سعد رفیق کو بھری عدالت میں ایسی بات کہہ دی کہ آپ کی بھی ہنسی نہیں رکے گی
انہوں نے کہا کہ پرویز رشید صاحب تقریر تو کرتے ہیں مگر بڑے پیار سے، راجہ ظفرالحق بڑے سینئر پارلیمنٹیرین ہیں اور انہیں پتہ ہے کہ ہم پارلیمنٹ کی کتنی عزت کرتے ہیں، پارلیمنٹ کو بھی چاہیے کہ ادارے کی عزت کرے۔
واضح رہے کہ انتخابی اصلاحات ایکٹ اورنا اہل شخص کے پارٹی صدر بننے کے خلاف درخواستوں کی سماعت کے دوران مسلم لیگ ن کے چیئرمین راجہ ظفرالحق ، وزیر خارجہ خواجہ آصف، وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق اور سینیٹر پرویز رشید بھی عدالت میں پیش ہوئے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں