وکلاء کے تصادم کی وجہ بننے والے ملتان بار کے صدر شیرزمان کل وقتی وکیل نہیں ہیں بلکہ وہ پراپرٹی کا بزنس کرتے ہیں

لاہور(سٹی نیوز)معروف صحافی اورتجزیہ کار مجیب الرحمان شامی نے انکشاف کیا ہے کہ گذشتہ روز لاہور ہائیکورٹ میں پیش آنے والے واقعات انتہائی افسوسناک ہیں ، وکلاء کے تصادم کی وجہ بننے والے ملتان بار کے صدر شیرزمان کل وقتی وکیل نہیں ہیں بلکہ وہ پراپرٹی کا بزنس کرتے ہیں۔
گذشتہ روز ہائی کورٹ میں پیش آنے والے افسوسناک واقعات پر جہاں سنجیدہ طبقات فکر مند ہیں وہیں وکلاء کے رویے کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، تاہم ان واقعات کی بنیاد بننے والے ملتان بار کے صدر شیر زمان کے حوالے سے اہم انکشاف ہوا۔ اس حوالے معروف تجزیہ کار اور صحافی مجیب الرحمان شامی نے کہا ہے کہ مجھے آج جسٹس آفتاب فرخ کا میسج آیا ہے جس میں وہ گذشتہ دنوں ہونے والے واقعات پر خاصے پریشان دکھائی دے رہے ہیں، اپنے پیغام میں انہوں نے لکھا ہے کہ میرے والد اور دادا بھی وکیل تھے اور عدالت ہمارے لئے ماں کا درجہ رکھتی ہے اور چند وکیل اس کے ساتھ جو سلوک کر رہے ہیں وہ انتہائی تکلیف دہ ہے۔مجیب الرحمان شامی نے پروگرام کے دوران انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ مجھے آج معلوم ہوا ہے کہ ملتان بار کے صدر شیر زمان پراپرٹی کا کام کرتے ہیں اور وہ کل وقتی وکیل بھی نہیں ہیں تاہم جو بھی صورتحال ہو انہیں عدالت میں پیش ہونا چاہیے۔
واضح رہے کہ گذشتہ روز لاہور ہائی کورٹ میں تصادم کے بعد ملتان بار کے صدر شیر زمان موٹر سائیکل پر بیٹھ کر فرار ہوگئے تھے اور انہیں تاحال تلاش نہیں کیا جاسکا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں