ادویات کی قیمتوں میں اضافہ، شیری رحمن نے حکومت کو بے حس قرار دیدیا

اسلام آباد: (سٹی نیوز) پاکستان پیپلز پارٹی کی سینئر رہنما سینیٹر شیری رحمان نے دعویٰ کیا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے 2019ء میں ادویات کی قیمتوں میں 15 فیصد اور اس سال 10 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے۔

سینیٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے دوستوں اور رشتے داروں کو نوازنے کیلئے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل (پی ایم ڈی سی) کو تہس نہس کیا۔

شیری رحمان نے کہا کہ ہم نے 13 سال ان قیمتوں کو روکے رکھا لیکن موجودہ حکومت نے ان میں اضافہ کر دیا، ان فیصلوں کے خلاف عدالتوں میں کیسز بھی آئیں گے۔

حکومتی پالیسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کورونا کی صورتحال میں کسی ملک نے ایسے نہیں کیا۔ غریب کہاں سے علاج کرائے گا اور دوائیں کہاں سے خریدے گا؟

پیپلز پارٹی رہنما کا کہنا تھا کہ حکومت نے ریلیف کے بچائے عوام کی جان کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔ انہوں نے ثابت کیا ہے کہ یہ لوگ بے حس ہیں۔ بچے سکول نہیں جا سکتے، شہریوں کیلئے دو وقت کی روٹی مشکل ہو گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں