کورونا وائرس: مسجد نبوی ﷺ میں پہلی تراویح باجماعت ادا

ریاض: (ویب ڈیسک) سعودی عرب میں ماہ رمضان کی آمد کے موقع پر کورونا وائرس کے باعث نافذ لاک ڈاؤن و کرفیو میں نرمی کیے جانے کے بعد مسجد نبوی ﷺ میں نماز تراویح کا اہتمام کیا گیا۔

حکومت نے لاک ڈاؤن میں نرمی کرتے ہوئے مسجد نبوی ﷺ سمیت دیگر مساجد میں نماز تراویح کے مختصر اجتماعات کی اجازت دی تھی تاہم حکومت نے ہدایات کی تھیں کہ تراویح میں عام نمازیوں کے بجائے مساجد کے ملازمین ہی شرکت کریں۔

سعودی میڈیا کے مطابق نماز تراویح حکومتی ہدایات کے مطابق مختصر کر کے 10 رکعت تک پڑھائی گئیں اور جماعت میں مسجد نبوی ﷺ کے ملازمین نے شرکت کی۔

مسجد نبوی کی انتظامیہ نے حفاظتی انتظامات کر رکھے تھے، کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے پوری مسجد خصوصاً ان حصوں کو زبردست طریقے سے سینیٹائز کیا گیا تھا جہاں نماز کا اہتمام کیا گیا تھا۔

اس دوران مسجد نبوی کو سینیٹائز کرنے، عملے کے ایک ایک فرد کے معائنے اور مسجد نبوی میں جنازے لانے والوں کے معائنے کا اہتمام برقرار رہے گا۔


مسجد نبوی ﷺ میں کورونا وائرس کے دور میں پہلی نماز تراویح کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی اور کئی افراد نے شکرانے بھی ادا کیے۔

سعودی عرب میں کورونا وائرس کے باعث مسجد نبوی ﷺ اور مسجد الحرام سمیت دیگر مساجد میں عارضی طور پر عام نمازیوں کے داخلے پر پابندی عائد کر دی تھی اور تمام مساجد میں باجماعت نماز کی ادائیگی کو بھی محدود کر دیا تھا۔

سعودی حکومت نے کورونا وائرس کے باعث عمرے پر بھی عارضی پابندی عائد کر رکھی ہے جب کہ تاحال سعودی حکومت نے کسی بھی ملک سے حج کا معاہدہ بھی نہیں کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں