سینئر صحافی و تجزیہ کار سلیم صافی نے کہا ہے کہ ہماری افغان پالیسی نے آج ہمیں یہ دن دکھائے ہیں

اسلام آباد (سٹی نیوز) سینئر صحافی و تجزیہ کار سلیم صافی نے کہا ہے کہ ہماری افغان پالیسی نے آج ہمیں یہ دن دکھائے ہیں، آئندہ اس خطے میں جو کچھ ہونے جا رہا ہے اس کا سب سے زیادہ نقصان افغانستان کو ہوگا، پاکستان کو چاہیے کہ وہ افغانستان میں امن کیلئے خلوص نیت کے ساتھ کام کرے۔
گزشتہ 16 سال میں ہم نے جو افغان پالیسی اپنائی ہے اس کی وجہ سے معاملات بے حد خراب ہوئے ہیں، ہم امریکہ کے اتحادی ہیں لیکن اس کے باوجود وہ ہمارے اوپر اعتماد کرنے کو تیار نہیں ہے، ترکی کے علاوہ تمام نیٹو اتحادی بھی پاکستان کی افغان پالیسی کو ٹھیک نہیں سمجھتے۔ اگر ہم امریکہ کے اتحادی ہیں تو ہمیں افغانستان میں قیام امن کیلئے واضح پالیسی اپنانا ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی اورموجودہ صدر اشرف غنی بھی بار بار پاکستان پر الزامات لگاتے رہے ہیں۔ اگر ہم اتحادی ہیں تو ہمیں امریکہ اور افغانستان کو وہ دینا ہوگا جو وہ مانگ رہے ہیں،اور اس کے بدلے میں ہم اپنے مطالبات منوا سکتے ہیں۔ امریکہ کی نئی افغان پالیسی کے بعد خطے میں جو کچھ ہونے جا رہا ہے اس کا نہ امریکہ کو نقصان ہوگا اور نہ ہی بھارت، روس یا چین کو کوئی نقصان ہوگا بلکہ اس سے افغانستان متاثر ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں