وہ ملک جہاں لوگ جنسی تسکین کے لئے بنائی گئی گڑیوں پر یوں ٹوٹ پڑے کہ ملک میں ان کی قلت ہوگئی، ایسی خبر آگئی کہ جان کر آپ کے بھی گال شرم سے لال ہوجائیں گے

کیپ ٹاؤن(مانیٹرنگ ڈیسک) مغربی معاشروں کی دیگر جملہ خباثتوں میں جدید ٹیکنالوجی نے ’جنسی گڑیا‘نامی خباثت کا اضافہ کر دیا ہے۔ گزشتہ دنوں جنسی گڑیاﺅں کی ایک کھیپ جنوبی افریقہ میں بھی درآمد کی گئی جہاں مرد ان کے اس قدر شائق نکلے کہ دنوں میں پورا سٹاک ختم ہو گیا اور ملک میں گڑیاﺅں کی قلت پیدا ہو گئی۔ ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق جنوبی افریقہ میں 60ہزار جنسی گڑیائیں منگوائی گئی تھیں جو صرف 10دن میں فروخت ہو گئیں۔
جنوبی افریقہ کی جنسی کھلونوں کی فرم ’لو لینڈ‘ نے گزشتہ سال دسمبر میں تجرباتی طور پر 6جنسی گڑیائیں درآمد کی تھیں جو آتے ہی فروخت ہو گئیں جس کے بعد فرم نے ساٹھ ہزار گڑیاﺅں کا آرڈر دے دیا لیکن وہ بھی ملک میں پہنچنے کے دس دن کے اندر ختم ہو گئیں۔فرم کا کہنا ہے کہ ”جنوبی افریقہ میں اس گڑیا کی قیمت 1ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 1لاکھ 55ہزار روپے) رکھی گئی تھی۔ ہم نے یہ کھیپ چین سے درآمد کی تھی اور اس کے فروخت ہونے کے بعدنئی کھیپ کا آرڈر دے دیا گیا ہے۔ جنوبی افریقہ جنسی گڑیاﺅں کی ہماری سوچ سے بڑھ کربڑی مارکیٹ ثابت ہو رہا ہے۔ “

اپنا تبصرہ بھیجیں